5پیپر جولائی، اکتوبر میں 3لینے کا اعلان، اولیول کی ڈیٹ شیٹ سے طالبعلم پریشان 

5پیپر جولائی، اکتوبر میں 3لینے کا اعلان، اولیول کی ڈیٹ شیٹ سے طالبعلم پریشان 

  

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل) ا ولیول کے 5پیپر 26جولائی 2021ء جبکہ اردو، مطالعہ پاکستان، اسلامیات، اکتوبر، نومبر میں لینے  کے اعلان نے بچے بچیوں سمیت والدین کو اضطراب میں مبتلا کر دیا 5مضامین کے بھی دو دو کی بجائے ایک ایک اور وہ بھی معروضی سوالات پر مبنی پیپر لینے فیصلہ کا نوٹیفیکیشن کیمبر ج یونیورسٹی نے جاری کر دیا، ملک بھر کے بڑے سکول اور کالجز نے او لیول کے پیپر کی ڈیٹ شیٹ کو بچوں کو کنفیوژکرنے کا عمل قرار دے دیا 5پیپر جولائی میں بقیہ 3پیپر اکتوبر میں دے کر او لیول کے بچے بچیاں ایف اے ایف ایس میں داخلہ کیسے لیں سکیں گے؟طلباء طالبات اور ان کے والدین سمیت اساتذہ بھی سر پکڑ کر بیٹھ گئے کیمبر ج کی طرف سے جاری ہونے والے نوٹیفیکیشن میں کہا گیا ہے او لیول کے 5مضامین کے پیپر 26جوالائی سے 6اگست تک ہوں گے۔ اولیول کے ہر مضمون کے دو پرچے ہوتے ہیں دو کی بجائے اب ایک ایک پیپر لیا جائے گا اور جو پیپر لیا جائے گا وہ بھی معروضی اور کثیر الاجواب ہو گا بچوں کو 3یا 4جوابات میں سے ایک پر نشان لگانا ہو گا او لیول کے طلباء طالبات کا کہنا ہے وفاقی وزیر تعلیم 26جولائی سے پیپر کروا کر کریڈٹ لے رہے ہیں خوشخبری دے رہے ہیں او لیول والے 6اگست کو پیپرز سے فارغ ہو جائیں گے کیمبرج یونیورسٹی نے ڈیٹ شیٹ دو حصوں میں بنائی ہے اکتوبر، نومبر کی ڈیٹ شیٹ کے مطابق اردو، اسلامیات، مطالعہ پاکستان کے پیپر ہوں گے کیا 26جولائی سے 6اگست کے نتائج کی بنیاد پر فیل یا پاس کا فیصلہ ہو گا یا نومبر کا انتظار کیا جائے نومبر میں نتیجہ آنے کی صورت میں داخلہ کہا ں ہو سکے گا؟ وفاقی وزیر تعلیم وضاحت کریں، او لیول کی ڈیٹ شیٹ نے مسئلہ حل کرنے کی بجائے مزید پچید گیاں پیدا کر دی ہے دلچسپ امر یہ ہے کرونا کی وجہ سے یوکے، بھارت، بنگلادیش، سعودی عرب، سری لنکااور دیگر ممالک نے او اینڈ اے لیول کے پیپر نہیں لیے سکولوں کے اساتذہ کی، اسسمنٹ کی بنیاد پر پرموٹ کردیا ہے ہماری وزارت تعلیم کی مس مینجمنٹ نے سارا تعلیمی اور امتحانی نظام تباہ کر دیا ہے اور مسئلہ حل کرنے کی بجائے بحران پیدا کر دیا ہے بچے بچیاں پہلے ہی کرونا اور چھٹیوں کی وجہ سے پڑھ نہیں پا ررہے تھے اب امتحان کے ساتھ نئی کلاسوں کے حوالے سے بھی پریشان ہو گئے ہیں کہ ہمارا داخلہ ہو سکے گاکہ نہیں ہو سکے گا۔ 

او لیول

مزید :

صفحہ آخر -