اتحادی ممالک افغانستان کو سکیورٹی فورسز کی مالی معاونت جاری رکھیں گے، نیٹو چیف 

اتحادی ممالک افغانستان کو سکیورٹی فورسز کی مالی معاونت جاری رکھیں گے، نیٹو ...

  

  

برسلز (این این آئی)نیٹو کے سربراہ نے کہا ہے کہ افغانستان کی فورسزاب اتنی مضبوط ہوچکی ہے کہ سکیورٹی کی ذمہ داریاں وہ تنہا ہی سنبھال سکتی ہیں۔مغربی فوجی اتحاد نیٹو کے سربراہ اسٹولٹن برگ نے خبر رساں ایجنسی کو دئیے گئے انٹرویو میں کہا کہ نیٹو نے تقریبا دو عشروں تک افغانستان میں سکیورٹی فراہم کی ہے لیکن اب وہاں کی حکومت اور سکیورٹی فورسزاس قدر مضبوط ہوچکی ہے کہ وہ بین الاقوامی فورسز کی مدد کے بغیر ہی اپنے پاوں پر کھڑی ہوسکتی ہے۔اسٹولٹن برگ نے کہامیں سمجھتا ہوں کہ اب افغان بھی یہ بات اچھی طرح محسوس کرتے ہیں کہ ہم نے بیس برس کے دوران اپنا بہت کچھ جان و مال افغانستان میں لگایا ہے۔نیٹو کے چیف کا کہنا تھاکہ اگر سکیورٹی فورسز کی اہلیت کی بات ہو یا سماجی اور اقتصادی ترقی کی بات، افغانستان ان دونوں شعبوں میں بہت آگے نکل چکا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا آخر کبھی نہ کبھی تو افغانوں کو اپنے ملک میں امن اور استحکام کی ذمہ داری خود اٹھانا ہی تھی۔اس صورت حال کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں نیٹو کے سربراہ کا کہنا تھا کہ نیٹو ممالک افغانستان کی وزارتوں کو صلاح و مشورے اور سکیورٹی فورسز کی مالی معاونت جاری رکھیں گے،نیٹو چیف کا مزید کہنا تھا ہم افغان سکیورٹی فورسز کو ملک کے باہر تربیت دینے کے امکان پر بھی غور کررہے ہیں لیکن اس سلسلے میں ابھی حتمی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے۔

نیٹو چیف  

مزید :

صفحہ آخر -