خواتین پر تشدد، زیر تفتیش مقدمات  کو فوری طور پر نمٹانے کی ہدایت لیگل برانچ کو متحرک کرنے کا فیصلہ

خواتین پر تشدد، زیر تفتیش مقدمات  کو فوری طور پر نمٹانے کی ہدایت لیگل برانچ ...

  

 بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)  وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کے ویژن اور آئی جی پنجاب انعام غنی کی ہدایات کے تحت ڈی پی اومحمد فیصل کامران کی طرف سے خواتین کے تحفظ کے حوالے سے اہم قدم اٹھایا (بقیہ نمبر14صفحہ6پر)

گیا،جس کے تحت ڈی پی اونے ضلع بھر کے تھانوں میں گھریلو تشددکے زیرتفتیش مقدمات کو فوری طورپر میرٹ پر یکسو کرنے کی ہدایات دی گئیں،ڈی پی او محمد فیصل کامران نے کہا کہ ریاست کے قانون نے خواتین کوہر حوالے سے ہر قسم کا تحفظ فراہم کیاہے،کسی شخص کو اس بات کی ہرگزہرگزاجازت نہیں دی جا سکتی کہ وہ بھائی،باپ،شوہر یا کسی بھی رشتہ کے تناظر میں خواتین کو تشدد کا نشانہ بنائے،انہوں نے کہا کہ اکثر اوقات گھریلو تشددکے واقعات کو چھپانے کی کوشش کی جاتی ہے میڈیا کے موجودہ دور میں اگر پولیس کو کسی جانب سے بھی گھریلو تشدد کی اطلاع مل جائے تو پولیس کی ذمہ داری ہے کہ وہ متاثرہ خاتون سے رابطہ کر کے قانون کے تحت اس کی داد رسی کرے،ڈی پی او محمد فیصل کامران نے کہا کہ گھریلو تشددکے واقعات کے حوالے سے درج مقدمات میں اکثر اوقات وہ دفعات نہیں لگائی جاتیں جس کا اس نوعیت کے واقعات میں قانون تقاضا کرتا ہے،ڈی پی او محمد فیصل کامران نے ہدایات جاری کیں کہ ایف آئی آر کے اندراج کے وقت پولیس آفیسر لیگل برانچ کی معاونت سے وقوعہ کے حقائق اور شواہد کے مطابق وہ تمام دفعات لگائے جو ضابطہ فوجداری میں درج ہیں،ڈی پی او محمد فیصل کامران نے کہا کہ تھانوں میں خواتین کی شکایات کے حوالے سے خصوصی طور پر لیڈیز پولیس کو بٹھایا جائے گاتاکہ تھانوں میں آنے والی خواتین کو اپنے مسائل اور شکایات بتانے کا مکمل موقع مل سکے۔

فیصلہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -