بی ایم پی ناکارہ فورس، ٹریننگ نہ علاقے پر گرفت، سیف الدین کھوسہ

بی ایم پی ناکارہ فورس، ٹریننگ نہ علاقے پر گرفت، سیف الدین کھوسہ

  

کوٹ چھٹہ(نامہ نگار)پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما و سابق ایم این اے سردار محمد سیف الدین خان کھوسہ نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ دو تین دن پہلے ٹرائیبل ایریا ڈیرہ غازیخان  میں ایک دلخراش واقع پیش آیا جس میں چند قانون شکن لادی گینگ کے غنڈوں کیطرف سے ایک آدمی کو اغوا کر کے جس بے دردی سے اس کے اعضا کاٹ (بقیہ نمبر29صفحہ6پر)

کر قتل کیا گیا اور اس کی ویڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر وائرل کی گئی جو کہ انتہائی تکلیف دہ ویڈیو ہے  میں اس واقع کی شدید الفاظ میں مذمت کرتا ہوں اس سے علاقہ میں خوف و ہراس کی فضا قائم ہو چکی ہے آج ٹرائبل ایریا میں جو کچھ ہو رہا ہے اس میں انتظامیہ کی ناکامی اور نا اہلی سامنے آ رہی ہے پچھلے کئی سالوں سے یہ گروپ جو کہ لادی گینگ کے نام سے مشہور ہوا ہے ان لوگوں نے پہاڑی علاقوں میں پناہ لے رکھی ہے جو کہ پہاڑ سے اتر کر موٹر سائیکل ڈکیتی اغوا برائے تاوان جیسی متعدد کاروائیاں کر کے واپس پہاڑ پر چڑھ جاتے ہیں لیکن گذشتہ دنوں میں جو دل دہلا دینے والا واقعہ پیش آیا وہ انتہائی قابل مذمت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو بہت بڑا چیلنج ہے لادی گینگ نے وہاں کے مقامی لوگوں کی زندگی کو اجیرن بنا رکھی ہے اتنا بڑا واقع ہونے کے بعد گذشتہ روز وزیر اعظم عمران خان نے اپنے لیہ دورے کے دوران اس واقع کا نوٹس لیا اور وہاں پر ماجود آئی جی پنجاب انعام غنی اور دیگر سکیورٹی فورسز کو ان قانون شکن سے سختی سے نمٹانے اور ان کا مکمل صفایا کرنے کے احکامات جاری کئے جو کہ خوش آئند بات ہے 2018 الیکشن کمپین کے حوالے سے تونسہ میں ایک جلسہ عام ہوا جس پر میں نے اور ماجودہ ایم این اے تونسہ خواجہ شیراز نے عمران خان سے کہا تھا کہ جس طرح آپ نے الیکشن جیتنے کے بعد فاٹا کو صوبہ کے پی کے میں ضم کرنے کا وعدہ کیا ہے اسی سے طرح وزیر اعظم منتخب ہونے کے بعد ٹرائبل ایریا ڈیرہ غازیخان کو بھی ختم کر کے اس سے سیٹل  ایرایا میں ضم کیا جائے اسی حوالے سے میری وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار سے پچھلے دو سال میں تین چار ملاقاتیں ہوئی ہیں میں نے انہیں لادی گینگ کی عوام سے کی جانے والی زیادتیوں بارے آگاہ کیا اور ان سے ریکوسٹ کی کہ ضلع ڈیرہ غازیخان آپکا اپنا ضلع اور گھر ہے یہاں پر چند مٹھی بھر قانون شکن عناصر کے خلاف سخت  کارروائی عمل میں لائی جائے جبکہ اب ماجودہ صورتحال کی پیش نظر پولیس و رینجر دیگر سیکورٹی ادارے مل کر اپریشن کیا جا رہا ہے جو کہ اس کا میری نظر میں مستقل حل نہیں ہے لادی گینگ ادھر ادھر تتر بتر ہو جائیں گے یا کہیں چھپ جائیں گے اس کا واحد حل جو کہ میں اکیلا دس سال سے آواز بلند کرتا آ رہا ہوں کہ اگر ڈیرہ غازیخان میں امن و امان کی صورت حال کو بہتر بنانا ہے تو ٹرائبل ایریا کو ختم کر کے سیٹل ایرایا میں ضم کیا جائے تاکہ وہاں پر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی رٹ قائم ہو سکے دوسرا ان کا کہنا تھا کہ ٹرائبل ایریا کو مانیٹرنگ کرنے کیلئے ایک BMP فورس بنی ہوئی ہے جو کہ میری نظر میں ایک ناکارہ فورس بن چکی ہے جن کی نہ تو کوئی ٹریننگ کی گئی ہے اور نہ ہی اس فورس کا علاقے میں جرائم پیشہ افراد پر گرفت مضبوط ہے جس کی وجہ سے ٹرائبل ایریا جرائم پیشہ افراد کیلئے محفوظ پناہ گاہ بن چکا ہے BMP فورس کا کام صرف افسران بالا کو پروٹوکول دینے کے علاوہ کچھ بھی نہیں میری وزیر اعظم عمران سے یہ اپیل ہے کہ وہ ایک ایگزیکٹو آرڈر کے تحت ٹرائبل ایریا ڈیرہ غازیخان کو ختم کر کے سیٹل ایریا میں ضم کریں تاکہ وہاں پر بھی فاٹا کی طرح ترقی ہو سکے اور وہاں کی عوام کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی ہو سکے اور ضلع ڈیرہ غازیخان میں امن و امان کی صورت حال بہتر ہو سکے۔

سیف الدین کھوسہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -