دفاعی میدان سے بڑی خبر، سعودی عرب نے اپنے بحری جنگی جہاز کی تیاری شروع کردی

دفاعی میدان سے بڑی خبر، سعودی عرب نے اپنے بحری جنگی جہاز کی تیاری شروع کردی
دفاعی میدان سے بڑی خبر، سعودی عرب نے اپنے بحری جنگی جہاز کی تیاری شروع کردی

  

ریاض (وقار نسیم وامق) سعودی  عرب نے اپنے بحری جنگی جہاز "سفینۃ جلالۃ الملک سعود" کی تیاری کا سرکاری طور پر آغاز کر دیا ، سعودی بحری جہاز بنانے کا منصوبہ سعودی رائل نیوی کو ترقی دینے کے لیے وضع کئے گئے مرکزی منصوبوں میں سے ایک ہے ۔ اس منصوبے میں 4 کثیر المقاصد جنگی بحری جہازوں کی تیاری شامل ہے ۔ 

ان جہازوں میں جدید ترین نظام اور آلات نصب ہوں گے جکبہ منصوبے میں بحری جہازوں کے عملے کی تیاری اور تربیت کے علاوہ لوجسٹک خدمات اور فنی سپورٹ کی فراہمی شامل ہے.سعودی عرب کی رائل نیوی نے بحری جہاز کی تیاری کا کام سرکاری طور پر شروع ہونے کی تقریب منائی۔ اس جہاز کو سرکاری طور پر "سفینۃ جلالۃ الملک سعود" (His majesty king saud ship)  کا نام دیا گیا ہے ۔ 

تقریب کا انعقاد امریکی ریاست وِسکونسن کے شہر میرینیٹ میں ہوا۔ تقریب میں سعودی رائل نیوی کے کمانڈر لیفٹننٹ جنرل فہد الغفیلی نے خصوصی شرکت کی۔ اس موقع پر سعودی رائل نیوی کے کئی سینئر افسران، واشنگٹن اور اٹاوا میں سعودی سفارت خانے کے عسکری اتاشیوں کے علاوہ امریکی بحریہ، لاک ہیڈ مارٹن کمپنی اور فینکانتری کمپنی کی متعدد سینئر شخصیات بھی موجود تھیں۔

سعودی رائل نیوی کے کمانڈر نے اس موقع پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز، ولی عہد اور وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان اور نائب وزیر دفاع شہزادہ خالد بن سلمان کی جانب سے اس سلسلے میں پیش کی جانے والی سپورٹ کو بھی سراہا۔

مزید :

عرب دنیا -