حکومت سندھ کا جیون نگر کےقریب تاریخی ثقافتی پکنک پوائنٹ اور جدید ریسٹ ہاؤس تعمیر کرنے کا فیصلہ

 حکومت سندھ کا جیون نگر کےقریب تاریخی ثقافتی پکنک پوائنٹ اور جدید ریسٹ ...
  حکومت سندھ کا جیون نگر کےقریب تاریخی ثقافتی پکنک پوائنٹ اور جدید ریسٹ ہاؤس تعمیر کرنے کا فیصلہ

  

عمرکوٹ(سید ریحان شبیر  ) تھر کی تہذیب وتمدن اور تاریخ کو اجاگر کرنے کے لیے تاریخی مقامات کاوزٹ کرنے والے سیاحوں کو تفریحی مواقع فراہم کرنے کے لیے محکمہ ثقافت  حکومت سندھ نے جیون نگر کےقریب 50 ایکٹر پر مشتمل تاریخی ثقافتی پکنک پوائنٹ اور جدید ریسٹ ہاؤس تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، تاریخی پس منظر   رکھنے والا ضلع عمرکوٹ اور تھر کا سیر و سفر کرنے کے لئے آنے والے سیاحوں کو تفریح ​​اور سہولیات کی فراہمی کے سلسلے میں ایک اہم اجلاس آج ڈپٹی کمشنر عمر کوٹ  ندیم الرحمن میمن کی زیر صدارت ان کے دفتر میں ایک اجلاس ہوا ۔

ڈپٹی کمشنر عمرکوٹ ندیم الرحمن میمن نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ  عمرکوٹ کو مغلیہ عہد سلطنت کےمغل بادشاہ اکبر بادشاہ کی جائے پیدائش کاشہر ہونےکا شرف حاصل ہے ، اسکےعلاوہ عمرکوٹ وادی مہران کاایک قدیم تاریخی شہر ہے، عمرکوٹ اورتھر کی  سرزمین تاریخ کے اوراق سےبھری پڑی ہے ، تاریخ کا آغاز صحرا تھر سے بھی ہوتا ہے یہاں پر ملکی اور غیر ملکی سیاحوں کے آنے اور ہر ممکن سہولیات کی فراہمی کے لیے سندھ حکومت پرکشش ماحول فراہم کرنے کے لئے کوشاں ہے  ۔

اس موقع پر محکمہ ثقافت کے ریذیڈنٹ انجینئر سید ندیم شاہ نے اجلاس کو بتایا کہ انتظامیہ سیاحوں کے لئے پرکشش ماحول مہیا کرنے کی کوشش کررہی ہے، عمرکوٹ اور تھر میں آئندہ سیاحوں کی تفریح ​​کے لئے عمرکوٹ میں ایک نیا پکنک پوائنٹ اور ریسٹ ہاؤس تشکیل دیا جائے گا، جس کے لئے ہمیں "50" ایکڑ اراضی کی ضرورت ہے۔اجلاس میں  بتایا گیا کہ عمرکوٹ کے جیون ننگر کے آس پاس 50 ایکڑ سرکاری اراضی محکمہ ثقافت کے لئے مختص کی گئی ہے جس کو محکمہ ثقافت کے حوالے کیا جائے گا۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر عمرکوٹ ندیم الرحمن میمن نے مختیارکار عمرکوٹ محسن چانڈیو کو ہدایت کی کہ جو اراضی محکمہ ثقافت کو مختص کی گئی ہے وہاں سے لوگوں کا قبضہ خالی کروا کر وہ سرکاری اراضی  محکمہ ثقافت کے حوالے کریں ۔

اس موقع پر  اسسٹنٹ کمشنر عمرکوٹ احسان اللہ خان ضلعی انفارمیشن آفیسر عبدالطیف سولنگی اور دیگرسرکاری افسران موجود تھے.

مزید :

علاقائی -سندھ -عمرکوٹ -