بھارت میں اظہار رائے کی آزادی پر پابندی، سماجی رابطے کی ویب سائٹ نے بھارتی حکومت سے بڑا مطالبہ کردیا

بھارت میں اظہار رائے کی آزادی پر پابندی، سماجی رابطے کی ویب سائٹ نے بھارتی ...
بھارت میں اظہار رائے کی آزادی پر پابندی، سماجی رابطے کی ویب سائٹ نے بھارتی حکومت سے بڑا مطالبہ کردیا

  

نیودہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن )سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر نے نے بھارت میں اپنے عملے کے تحفظ سے متعلق تشویش کا اظہار کرتے ہوئے بھارتی حکومت سے آزادئ اظہار رائے کا احترام کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

ٹویٹر انتظامیہ نے بھارت میں اپنے عملے کے تحفظ سے متعلق تشویش کا اظہار کیا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق دہلی پولیس نے چند روز قبل ٹویٹر کے دفتر پر چھاپہ مارا تھا اور ملازمین کو ہراساں کیا تھا۔ تاہم انڈین پولیس نے چھاپے پر موقف اختیار کیا تھا کہ انہوں نے دفتر کادورہ کیا تھا، جس کا مقصد پولیس کو موصول ہونے والی بی جے پی ترجمان سمبت پترا کی ٹوئٹ کی درجہ بندی کیے جانے کی شکایت پر کمپنی کے منیجنگ ڈائریکٹر کو نوٹس دینا تھا۔

واضح رہے کہ بھارت میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کے حوالے سے نئے قوانین کے باعث سوشل میڈیا ویب سائٹس کو مشکلات کا سامنا ہے،بھارت دھونس  اور زبردستی اپنے قوانین سوشل میڈیا ویب سائٹس پر نافذ کرنا چاہتا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -سائنس اور ٹیکنالوجی -