کینیڈا میں قائم کس فرم نے مودی حکومت کے بیانیے کو فروغ دینے کے لئے ویب سائٹ بنائی؟تہلکہ خیز رپورٹ آ گئی

کینیڈا میں قائم کس فرم نے مودی حکومت کے بیانیے کو فروغ دینے کے لئے ویب سائٹ ...
کینیڈا میں قائم کس فرم نے مودی حکومت کے بیانیے کو فروغ دینے کے لئے ویب سائٹ بنائی؟تہلکہ خیز رپورٹ آ گئی

  

ٹورنٹو(ڈیلی پاکستان آن لائن) اٹلانٹک کونسل کی ڈیجیٹل فرانزک ریسرچ لیبارٹری کی ایک رپورٹ کا کہنا ہے کہ کینیڈا سے تعلق رکھنے والی ایک مواصلاتی کمپنی نے ایک ویب سائٹ بنائی جس نے خود کو ایک بھارتی میڈیا ادارے اور حقائق کی جانچ پڑتال کرنے والی سائٹ کے طور پر پیش کیا اورپھر بھارتی حکومت کے بیانیے کو فروغ دیا۔

 کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ڈی ایف آر لیب کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ٹورنٹو میں قائم کمپنی پریس مانیٹر نے ویب سائٹ انڈیا ورسز ڈس انفارمیشن اور سائٹ کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس بنائے اوران کو چلایا،اس نے اس کے متوازی ایک حکومت حامی سائٹ ’انڈیا نیوز نیٹ ورک‘ بھی بنائی اور اس کو رجسٹرڈ کروایا جس نے’ بھارت ورسز ڈس انفارمیشن‘ کے لئے بنیادی مواد فراہم کیا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ عوامی تاثرات کو متاثر کرنے کے لئے مودی حکومت کے حق میں اور اس کے مخالفین کے خلاف لکھے گئے ویب سائٹ کے مضامین کو ٹویٹر اور فیس بک پر درجنوں بھارتی سفارتخانوں اور قونصل خانے کے تصدیق شدہ سوشل میڈیا اکاؤنٹس کے ذریعے آگے بڑھایا گیا ، ویب سائٹ پر بہت سے مضامین میں بھارت کی مرکزی حکومت کے نافذ کردہ متنازعہ پالیسی فیصلوں کے بارے میں اس کے بیانیے کو پیش کیاگیا جن میں بھارت کے ساتھ کشمیر کے تعلقات کی وضاحت کرنے والی بھارتی آئین کی دفعہ 370 کی منسوخی ، متنازعہ شہریت ترمیمی قانون کا نفاذ شامل ہے، جس میں مذہبی اقلیتوں پر ظلم و ستم کی اجازت دی گئی ہے اور دہلی میں فرقہ وارانہ تشدد کے دوران مسلمانوں کو نشانہ بنایاگیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -