کسی کام کیلئے مکمل طور پر حالات کا درست ہونے کا مطلب ہے کہ ہمیشہ کیلئے انتظار کیا جائے

کسی کام کیلئے مکمل طور پر حالات کا درست ہونے کا مطلب ہے کہ ہمیشہ کیلئے انتظار ...
کسی کام کیلئے مکمل طور پر حالات کا درست ہونے کا مطلب ہے کہ ہمیشہ کیلئے انتظار کیا جائے

  

مصنف:ڈاکٹر ڈیوڈ جوزف شیوارڈز

قسط:81

مسٹر متحرک اور غیرمتحرک دونوں کا رویہ مختلف ہے۔ مسٹر متحرک جو بھی کرنا چاہتا ہے پورے اعتماد کے ساتھ کر لیتا ہے۔ مسٹر غیرمتحرک کچھ بھی نہیں کر پاتا کیونکہ وہ عمل نہیں کرتا۔ اس طرح اس کا اعتماد متزلزل رہتا ہے۔ ہر کوئی مسٹر متحرک بننا چاہتا ہے، اس لیے ہمیں عمل کی عادت کو اپنانا ہو گا۔ زیادہ تر مسٹر غیرمتحرک اس وقت تک کام شروع نہیں کرتے جب تک تمام حالات اور متعلقہ چیزیں سو فیصد ان کےلئے ممکن نہیں ہو جائیں، وہ اپنی کامیابی کیلئے 100 فیصد ضمانت چاہتے ہیں کیونکہ ہر انسان مکمل نہیں ہے۔ اس لیے کسی کام کیلئے مکمل طور پر حالات کا درست ہونے کا مطلب ہے کہ ہمیشہ کیلئے انتظار کیا جائے۔

ذیل میں 3 لوگوں کے حالات دیئے جا رہے ہیں جس سے پتہ چلتا ہے کہ وہ حالات سے کیسے نپٹتے ہیں۔

کیس نمبر 1 مسٹر جی این نے شادی کیوں نہ کی؟

مسٹر جی این اس وقت 30سے زیادہ کے ہیں، انہوں نے بہت اچھی تعلیم حاصل کی اور دفتر میں اکاﺅنٹنٹ ہیں۔ وہ اب تک کنوارے ہیں او رشکاگو شہر میں رہتے ہیں۔ ان کی زندگی کی شدیدترین خواہش شادی کرنا ہے، وہ ایک ایسی بیوی چاہتے ہیں جو ان سے محبت کرے، ان کا ساتھ دے، بچے پیدا کرے۔

انہوں نے کئی بار شادی کرنے کی کوشس کی لیکن کوئی نہ کوئی قباحت آڑے آ جاتی تھی۔

ایک دفعہ وہ شادی کرنے ہی والے تھے کہ شادی سے ایک دن پہلے انہیں پتہ چلا کہ جس لڑکی سے وہ شادی کرنے والے ہیں وہ لڑکی صحیح نہیں ہے، اس لیے انہوں نے شادی نہ کی۔ آج سے کوئی 2سال پہلے انہوں نے ایک لڑکی سے پھر شادی کرنے کا فیصلہ کیا۔ وہ لڑکی کافی خوبصورت تھی، زندہ دل بھی تھی اور ذہین بھی۔

جی این صاحب ہر بات کے بارے میں مکمل یقین کرنا چاہتے تھے کہ سب کچھ صحیح طور پر ہو۔ انہوں نے4 صفحوں پر خوبصورت، ٹائپ کر کے ایک دستاویز تیار کی او رہونے والی دلہن کے حوالے کی کہ اگر تم میری ان باتوں سے متفق ہو تو میں شادی کرنے کو تیا رہوں۔ ایک کاغذ پر لکھا تھاکہ مذہب کے حوالے سے تم کونسے گرجے میں جاتی ہو؟ اس گرجے کو کتنا چندہ دیتی ہو؟ ایک صفحے پر تھا کہ ہمارے کتنے بچے ہونے چاہیےں؟ ایک صفحے پر تھا کہ آپ کی کتنی سہیلیاں ہیں؟ اس کے علاوہ تمہاری تنخواہ کتنی ہے اور تم یہ تنخواہ کیسے خرچ کرتی ہو؟ ایک جگہ لکھا تھا کہ اپنی عادتوں کے بارے میں بھی آگاہ کرو؟

جب اس ہونے والی بیوی نے اتنا لمبا چوڑا لکھا ہوا دیکھا اور اس کو پڑھ کر جی این صاحب کو واپس بھیج دیا۔ اس نے کہا: میں ایسی شادی سے باز آئی۔

جی این صاحب نے اپنی پریشانی مجھے بتاتے ہوئے کہا: آخر اس میں کیا حرج تھا؟ یہ ایک سادہ سا معاہدہ تھا آخر شادی ایک بڑا فیصلہ ہے۔ ا س کو پوری احتیاط کے ساتھ عملی جامہ پہننانا چاہیے!

میں نے کہا جناب آپ پورے طور پر غلط ہیں۔ آپ ہر بات کو اپنے حق میں دیکھنا اور کرنا چاہتے ہیں۔ آپ کا معیار تو بہت اونچا ہے۔ آپ کے معیار تک کوئی پہنچ ہی نہیں سکتا۔

کامیاب لوگ آنے والے مسائل کو ان کے وقت پر ہی حل کرتے ہیں جو مسائل ابھی ہیں ہی نہیں ان کو پہلے سے کسے حل کیا جا سکتا ہے؟

ہم کسی انسان کو مکمل دیکھنے کیلئے ہمیشہ کا انتظار کریں گے اور ایسا ہوتا ہے بھی مشکل۔

کیس نمبر 2 مسٹر جے ایم کا نیا گھر

ہر بڑا فیصلہ کرنے پر ذہن خودبخود متحرک ہو کر کام کرنے یا نہ کرنے کے بارے میں حرکت میں آ جاتا ہے۔ یہاں ہم ایک نوجوان کا معاملہ بتاتے ہیں جس نے کام کرنے کا فیصلہ کیا اور بہت بڑا نتیجہ حاصل کر لیا۔( جاری ہے ) 

نوٹ : یہ کتاب ” بُک ہوم “ نے شائع کی ہے ( جُملہ حقوق محفوظ ہیں )۔

مزید :

ادب وثقافت -