ہے نورانی کوہِ چاغی

  ہے نورانی کوہِ چاغی

  

ہے نوارنی کوہِ چاغی

ایٹم بم نے کایا پلٹ دی

                     جگمگ جگمگ ہوئی ہے یکسر 

                     اپنے وطن کی وادی،وادی

غیرت نے جب آکے جھنجھوڑا

نیند کی ماتی قوم ہے جاگی۔

                    دشمن کی توپوں میں رنجک

                   کذب کی،کفر کی،مکر و فن کی

اس نے اگلہ شعلہ ایماں۔۔۔

ہم نے جب بھی توپ ہے داغی

                     حق کے لشکر سامنے آئے

                    اے لو!کفر کی فوج ہے بھاگی

عظمت ِدیں کا راگ ہے دلکش

وطن ہمارا اس کا راگی۔۔۔

                      ہوئے نہیں ہم ہر گز جارح

                      دشمن ہے حملوں سے داغی

ہاں، دشمن ہے کفر کا چیلا

ہاں،ہم ہیں اللہ کے غازی

                        ہے تخلیق مشیتِ حق کی 

                        رہے گا ملک ہمارا باقی

اہلِ وطن!یہ دھیان میں رکھنا

مت ہو آقاؐ کی سرتابی 

                                 لالہ صحرائی

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -