نظریہ پاکستان ٹرسٹ کے زیر اہتمام ”یوم تکبیر“کی خصوصی تقریب

  نظریہ پاکستان ٹرسٹ کے زیر اہتمام ”یوم تکبیر“کی خصوصی تقریب

  

        لاہور (سٹی رپورٹر) یوم تکبیر پاکستانی قوم کیلئے یومِ فخر ہے۔ 28 مئی 1998ء کا دن ہماری سلامتی‘ دفاع اور قومی وقارو افتخار کی علامت کے طور پر ہمیشہ زندہ رہے گا۔ پاکستان کو ایٹمی طاقت بنانے میں ذوالفقار علی بھٹو، میاں نواز شریف اور ڈاکٹر عبدالقدیر خان کا کردار ناقابل فراموش ہے۔ اس دن بھارت کا غرور خاک میں مل گیا اور پاکستان عسکری لحاظ سے ناقابل تسخیر بن گیا۔ آج ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم سیاسی‘ گروہی و مسلکی اختلافات کو پس پشت ڈال کر ایک متحد قوم کی حیثیت سے پاکستان کی تعمیر وترقی میں اپنا بھرپور کردار ادا کریں۔ان خیالات کااظہار مقررین نے ایوان کارکنان تحریک پاکستان‘ لاہور میں ”یوم تکبیر“ کے موقع پر منعقدہ خصوصی تقریب کے دوران کیا۔سینئر وائس چیئرمین نظریہ پاکستان ٹرسٹ میاں فاروق الطاف نے کہا کہ میاں نواز شریف کے دور حکومت میں پاکستان نے ایٹمی دھماکے کیے اور یہ اعزاز ان کی قسمت میں ہی لکھا تھا۔ ذوالفقار علی بھٹو نے ایٹمی پروگرام شروع کیا اوراسے پایہ تکمیل تک پہنچانے میں ڈاکٹر عبدالقدیر خان کا کردار بھی ناقابل فراموش ہے۔ ممتاز صحافی و دانشور مجیب الرحمن شامی نے کہا کہ پاکستان کو ایٹمی قوت بنانے میں ڈاکٹر عبدالقدیر خان کاکردار کسی سے پوشیدہ نہیں ہے جبکہ میاں نواز شریف کی قیادت میں پاکستان ایٹمی طاقت بنا تھا۔ ایٹمی دھماکوں کے ایک سال بعد اس دن کو سرکاری سطح پر منانے کا فیصلہ کیا گیا تو اس دن کا نام تجویز کرنے کیلئے  میری سربراہی میں ایک کمیٹی بنی جس نے ہزاروں ناموں میں سے ”یوم تکبیر“ کا انتخاب کیا اور اس طرح یہ دن اللہ کی کبریائی کے ساتھ جڑ گیا۔ انہوں نے کہا یہ دن ہمیں قومی وحدت کا پیغام اور اس امر کی نشاندہی کرتا ہے کہ یہ قوم بڑی باصلاحیت ہے جو کسی کام کو کرنے کا ارادہ کر لے تو کر کے دم لیتی ہے۔یوم تکبیر ہمیں اتحاد و یکجہتی کا پیغام دیتا ہے اور اسی صورت ہم اپنی منزل پا سکتے ہیں۔ مسلم لیگ(ن) پنجاب کے نائب صدر رانا محمد ارشد نے کہا کہ 28مئی1998ء ایسا دن ہے جس نے دنیا کے ہر گوشے میں قیام پذیر پاکستانیوں کا سر فخر سے بلند کردیا تھا۔ معروف ماہر تعلیم پروفیسر عابد شیروانی نے کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو ایٹمی پروگرام کے معمار تھے ان کے بعد سب حکمرانوں نے اس پروگرام کو آگے بڑھایا۔صدر نظریہ پاکستان فورم آزاد کشمیر مولانا محمد شفیع جوش نے کہا کہ تحریک پاکستان اور تحریک آزادی کشمیر نعرہ تکبیر کے بل پر ہی چلتی رہی ہے۔تحریک پاکستان کامیاب ہوئی اور انشاء اللہ تحریک آزادی کشمیر بھی کامیاب ہو گی۔تقریب سیسیکرٹری نظریہ پاکستان ٹرسٹ ناہید عمران گل، بیگم صفیہ اسحاق،سہیل بشیر، پروفیسر ثمینہ بشریٰ، شاہد محمود، اکرام اللہ خان و دیگر نے بھی خطاب کیا جبکہ مجاہد حسین سید، شہزاد خان، بوبی گجر، اساتذہ کرام،طلبا و طالبات سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -