وزیراعلیٰ پنجاب نے گریٹر اقبال پارک میں جلسوں پر پابندی کی منظوری دیدی

وزیراعلیٰ پنجاب نے گریٹر اقبال پارک میں جلسوں پر پابندی کی منظوری دیدی

  

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کا بڑا فیصلہ، گریٹراقبال پارک میں جلسوں پر مکمل پابندی لگانے کا اعلان، وزیراعلیٰ حمزہ شہباز نے گریٹر اقبال پارک میں جلسوں پر پابندی لگانے کی اصولی منظوری دے دی ہے او رکہاہے کہ تاریخی پارک کو جلسوں کیلئے استعمال کرنا کسی طور پر مناسب نہیں۔وزیراعلیٰ حمزہ شہباز نے ایک اور احسن اقدام اٹھاتے ہوئے گریٹر اقبال میں داخلہ فیس لگانے کی تجویز مسترد کردی ہے-انہوں نے کہاکہ یہ غریب آدمی کا پارک ہے، کسی صورت داخلہ فیس عائد نہیں کروں گا، اس تجویز پر غور کرنا تو دور کی بات، اسے اجلاس میں پیش کرنا بھی مناسب نہیں۔ وزیراعلیٰ حمزہ شہبازنے سابق دور میں پودوں کے بیج بروقت نہ خریدنے پر برہمی کا اظہار کیا ہے-وزیراعلیٰ حمزہ شہبازنے بروقت بیج نہ خریدنے کے حوالے سے انکوائری کا حکم دیاہے-وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ خالی مقامات پر درخت، پودے اور گھاس لگانے کا کام جلد شروع کیا جائے اور پارکس اینڈ ہارٹیکلچراتھارٹی کا بورڈ جلد مکمل کیاجائے-وزیراعلیٰ نے کہاکہ گھروں میں کام کرنے والے مالیوں کو فی الفور واپس بلایا جائے اورمیرے گھر میں بھی اگر کوئی مالی ہے تو اسے بھی واپس بلا یا جائے اور اس حوالے سے زیرو ٹالرنس پالیسی پر عمل کیا جائے۔انہوں نے کہاکہ جنوبی پنجاب میں بھی خالی اراضی کی نشاندہی کرکے پودے لگانے کا پلان مرتب کیا جائے۔ جلو بوٹینیکل پارک میں بٹرفلائی ہاؤس کو بھی جلد فنکشنل کیا جائے۔انہوں نے کہاکہ پی ایچ اے کے معاملات کو شفاف طریقے سے چلایا جائے گا۔ کسی سفارش نہیں سنوں گا اورپی ایچ اے کو پوری سپورٹ دوں گا۔وزیراعلیٰ نے واٹس ایپ گروپ بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ گروپ میں کئے گئے فیصلوں پر پیش رفت کے بارے میں روزانہ کی بنیاد پر اپ ڈیٹ کیا جائے۔ وزیراعلیٰ کو بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ تحریک انصاف کے جلسے سے گریٹر اقبال پارک میں پودے اور گھاس تباہ ہوئی اور اس جلسے سے پارک کو تقریباً50 لاکھ روپے کا نقصان ہوا۔خواجہ احمد حسان، افتخار احمد، سیکرٹری ہاؤسنگ، کمشنر لاہور ڈویژن، کرنل (ر) مبشر جاوید، عمران گورایہ اور ڈی جی پی ایچ اے نے اجلاس میں شرکت کی- حمزہ شہباز نے میٹرو بس سروس کے انفراسٹرکچر کی بحالی کی منظوری دے دی۔ وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کی زیر صدارت  ماڈل ٹاؤن میں اجلاس منعقد ہوا جس میں لاہور میٹرو بس سروس کے امور اور انفراسٹرکچر کی بحالی کے پروگرام کا جائزہ لیا گیا-وزیراعلیٰ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ میٹرو بس عام آدمی کی سواری ہے۔ سابق دور میں فلاح عامہ کے اس منصوبے کو بری طرح نظر انداز کیا گیا۔ انہوں نے ہدایت کی کہ سٹیشن پر بسوں کی آمد ورفت کے بارے لاؤڈ سپیکر سے مسافروں کو اپ ڈیٹ رکھنے کا میکنزم وضع کیا جائے۔لاہور میٹرو بس سروس کے انفراسٹرکچر کی بحالی کیلئے ترجیحات کا تعین کیا جائے اور بحالی کے کاموں کو کم سے کم عرصے میں مکمل کیاجائے۔ وزیراعلیٰ حمزہ شہباز نے کہا کہ بحالی کے کاموں کی کوالٹی پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا۔قواعد و ضوابط کے تحت انفراسٹرکچر کی بحالی کے کاموں سے متعلقہ امور کو تیزی سے آگے بڑھایا جائے۔وزیراعلیٰ حمزہ شہباز نے میٹرو بس سٹیشنز پر صفائی کے انتظامات کو بہتر بنانے کی ہدایت کی اور کہا کہ مون سون سیزن سے قبل پراجیکٹ کی چھتوں کی صفائی کا کام مکمل کیا جائے اور ویٹنگ ایریاز میں پنکھوں کے ساتھ ائیر کولر لگانے کا جائزہ لیا جائے۔انہوں نے کہاکہ سٹیشنزاور کوریڈور سے ریونیو جنریشن کیلئے جامع پلاننگ کی جائے اورجلد حتمی پلان پیش کیاجائے- خواجہ احمد حسان، رمضان صدیق بھٹی، ماجد ظہور، علی رضا، سیکرٹری ٹرانسپورٹ، ڈی جی ایل ڈی اے، چیف انجینئر ایل ڈی اے اور پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کے حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ حمزہ شہباز نے یوم تکبیر پر قوم کو مبارکباد دیتے ہوئے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ 28مئی پاکستان کی سیاسی اور دفاعی تاریخ کا اہم ترین دن ہے۔ مسلم لیگ ن کے قائد محمد نواز شریف نے ایٹمی دھماکے کرکے پاکستان کے دفاع کو نا قابل تسخیر بنایا۔سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف کی قیادت میں 28مئی 1998 ء کو پاکستان کے اس تاریخی کارنامے سے پوری قوم کا سرفخر سے بلند ہوا۔ وزیراعلیٰ حمزہ شہباز نے کہا کہ یوم تکبیر قومی امنگوں کا ترجمان اور ملی یکجہتی کا تاریخ ساز دن ہے۔سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف نے تمام تر دباؤ کو بالائے طاق رکھتے ہوئے ایٹمی دھماکے کئے۔ آج کوئی بھی پاک وطن کی جانب میلی آنکھ سے نہیں دیکھ سکتا۔

حمزہ شہباز

مزید :

صفحہ اول -