ایک دوسرے کو گالیاں دینے والے گھر میں خوشحالی نہیں آسکتی، پرویز اشرف 

ایک دوسرے کو گالیاں دینے والے گھر میں خوشحالی نہیں آسکتی، پرویز اشرف 

  

 لاہور(نامہ نگار)پاکستان پیپلز پارٹی کے رہمنااور سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ آمر نے ہر چیز کو شکنجے میں لینے کی کوشش کی،آمروں نے اس کا حلیہ بگاڑااور اسے یکسر مذاق بنا کر رکھ دیا بے نظیر 1973ء کے آئین کی بحالی کے لئے لڑتی دنیا سے چلی گئیں،آصف زرداری نے پاکستان کھپے کا نعرہ لگا کے ملک بچا لیا،ان خیالات کااظہار پیپلز پارٹی وسطی پنجاب سے متعلق 18ویں ترمیم اور اس کے اثرات پرالحمراہ ہال میں سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا، راجہ پرویز اشرف نے مزید کہا کہ قومی اتفاق رائے کی بنیاد رکھنے والے کا نام بھٹو ہے،ایسی دستاویز جو سارے پاکستانیوں کو آپس میں جوڑ دے،بھٹو نے سینٹ آف پاکستان کی بنیاد بھی رکھی،1973میں ایک عظیم سیاستدان بھٹونے سرزمین بے آئین کو آئین دیا،کسی نے آصف زرداری کو اپنے اختیارات پارلیمنٹ کو دینے کا نہیں کہا تھا،جہاں پٹواری اپنا اختیار کسی کونہیں دیتا وہاں مرد حر نے اپنے تمام اختیارات پارلیمنٹ کو دے دیئے  وقت کیساتھ ہم میں سے برداشت ختم ہوتی جا رہی  ہے،قوت برداشت ہماری قوت ہے  پاکستان کو معیشت سے زیادہ محبت اور پیار کی ضرورت ہے، زیادہ محبت دینے والے کو حکومت کا اختیار ہونا چاہیے،انہوں نے مزید کہا کہ ایک دوسرے کو گالیاں دینے والے گھر میں خوشحالی نہیں آ سکتی،نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم کا بینظیر بھٹو کو خراج عقیدت پیش کیا،سچائی کو بند باندھ کر نہیں روکا جا سکتا،ساری جماعتوں کی رائے سے 18ترمیم پاس ہوئی آج بھٹو کا نواسہ اور بی بی کے بیٹے کی دنیا بھر میں پذیرائی ہوتی ہے،پیپلز پارٹی کے لوگ پھانسی پر چڑھ کر بھی کہتے ہیں کہ جمہوریت بہترین انتقام ہے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ممبر پاکستان بارکونسل عابد ساقی نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی قیادت کو عدلیہ سے کبھی انصاف نہیں ملا،ایسا نظام چاہتے ہیں جس میں پیپلز پارٹی کو بھی انصاف ملے، ذوالفقار بھٹو کا جوڈیشل مرڈر ہوا عدلیہ کو ہر دروازہ کھٹکھٹایا مگر انصاف نہ ملا،ہمیں پھر ایک لمبی جدوجہد کی ضرورت ہے پیپلز پارٹی کے رہنما فرحت اللہ بابر نے کہا کہ اٹھارہویں ترمیم کو آنکھوں سے بنتے دیکھا،ا، اٹھارہویں ترمیم کو سمجھنا ہوگا   سیدفہد حسن نے کہا 18ویں ترمیم نے آئین پاکستان کے جمہوری ڈھانچے کو مضبوط کیا ہے  سید حسن مرتضی نے کہا کہ ملک پر مسلط غیر آئینی طاقتوں کیخلاف لبرل فورسز کا اتحاد ضروری ہے پیپلز پارٹی نے ہمیشہ مشکل فیصلے لئے،آنے والے دنوں میں بھی ہم مشکل فیصلے لیں گے  یوم تکبیر کے حوالے سے تاریخ میں تذکرہ ہے مگر اس کی بنیاد رکھنے والے بھٹو کا نہیں سیمینار سے دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا جبکہ رانا فاروق سعید، ثمینہ خالد گھر کی اسلم گل،عزیز الرحمن چن،اسرار بٹ چودھری اشرف،امیر حیدر ہوتی،فیصل میر،عقیلہ۔یوسف،نایاب جان افنان بٹ،محسن،ملہی،کھوکھر شریک،نیلم جبار،فائزہ ملک،نرگس خان،سونیا خان،صغیرہ اسلام،بیگم ناصرہ شوکت،شاہدہ جبیں،ڈاکٹر خیام سمیت دیگر نے شرکت کی۔

پرویز اشرف

مزید :

صفحہ آخر -