سی آئی اے سربراہ کے شہریوں کی ہلاکت کیس میں نامزد ہونے کے چند گھنٹوں بعد پھر ڈرون حملہ ،تین افراد جاں بحق

سی آئی اے سربراہ کے شہریوں کی ہلاکت کیس میں نامزد ہونے کے چند گھنٹوں بعد پھر ...
سی آئی اے سربراہ کے شہریوں کی ہلاکت کیس میں نامزد ہونے کے چند گھنٹوں بعد پھر ڈرون حملہ ،تین افراد جاں بحق

  

 پشاور،شمالی وزیرستان ( مانیٹرنگ ڈیسک) ہنگو میں ڈرون حملے میں شہریوں کی ہلاکت کے مقدمے میں واشنگٹن اور پاکستان میں امریکی سی آئی اے کے سربراہوں کیخلاف مقدمہ درج ہونے کے چند گھنٹے بعد ہی امریکی ڈرون طیارے نے میرانشاہ کے قریب گاﺅں انغرکے ایک گھر پر میزائلوں سے حملہ کردیا ہے جس کے نتیجے میں تین افراد جاں بحق ہوگئے۔ بتایا گیا ہے کہ حملے سے دو گھنٹے پہلے درون طیارے نے نچلی سطح پرپروازیں کیں اور حملے بعد بھی پروازیں جاری رہیں جس سے قبائل میں خوف و ہراس پھیل گیااور امدادی کارروائیوں میں مشکلات کا سامنا رہا۔ابتدائی طورپر مرنے والوں کی شناخت نہیں ہوسکی تاہم عمومی طورپر مقامی افراد یا کسی ٹارگٹ کے ساتھ مارے جانیوالے مقامی افراد ہوتے ہیں ۔واضح رہے کہ ڈروں حملوں کیخلاف تحریک انصاف کئی دنوں سے احتجاج کر رہی ہے اور اس نے خیبر پختونخوا ہ سے افغانستان میں موجود نیٹو افواج کے لیے جانیوالی سپلائی بھی بند کر رکھی ہے لیکن اسے وفاقی حکومت کی جانب سے سپورٹ کے بجائے مخالفت کا سامنا ہے اور وزیرداخلہ کے علاوہ دیگر رہنماءپی ٹی آئی کی قیادت کو تنقید کانشانہ بنارہے ہیں ۔

مزید : پشاور /اہم خبریں