تبدیلی ہوا میں اڑ گئی ،پروٹوکول نہ دینے پر وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے پنجاب کے د و اعلیٰ افسروں کوہٹا دیا ،خبر رساں ادارے نے تہلکہ خیز انکشاف کردیا

تبدیلی ہوا میں اڑ گئی ،پروٹوکول نہ دینے پر وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ...
تبدیلی ہوا میں اڑ گئی ،پروٹوکول نہ دینے پر وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے پنجاب کے د و اعلیٰ افسروں کوہٹا دیا ،خبر رساں ادارے نے تہلکہ خیز انکشاف کردیا

  



سیالکوٹ ( آن لائن )وزیراعلیٰ پنجاب ایک بار پھر بیورو کریسی کے ساتھ الجھ گئے ، سیالکوٹ کے غیر اعلانیہ کے دورہ کے موقع پر ڈی سی او سیالکوٹ اور ڈی پی او سیالکوٹ کو وزیر اعلیٰ کی گاڑی کے ہمراہ بروقت سیالکوٹ سے روانہ کرنے کیلئے نہ پہنچنے پر عہدوں سے ہٹا دیا، دونوں افسران گاڑی کے معمولی حادثے کی وجہ سے چند منٹ تاخیر سے پہنچے تھے۔

تفصیلات کے مطابق پاکپتن کے ڈی پی او رضوان گوندل کے تنازعے سے بمشکل بچ نکل جانے والے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے اس بار اپنے سینگ ڈی پی او سیالکوٹ عبدالغفار قیصر انی اور ڈی سی او طاہر وٹو کے ساتھ پھنسالئے۔ وزیراعلیٰ پنجاب گزشتہ روز غیر اعلانیہ دورے پر سیالکوٹ پہنچے تھے انہیں واپس روانہ کرنے کیلئے ڈی سی او اور ڈی پی او چند منٹ تاخیر سے پہنچے جسکی وجہ یہ بتائی گئی کہ ان کے سکواڈ کی گاڑی ایک دوسری گاڑی کے ساتھ معمولی حادثے کا شکار ہوگئی تاہم وزیراعلیٰ پنجاب نے اس عذر کو رد کرتے ہوئے دونوں افسران کوعہدوں سے ہٹانے کاحکم جاری کردیا۔

دلچسپ امر یہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی طرف سے بھرپور سپورٹ ملنے کے بعدوزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کے مزاج دن بدن شاہانہ ہوتے جارہے ہیں، رضوان گوندل ڈی پی او کے بعد بیورو کریسی کے ساتھ یہ انکا دوسرا بڑا تنازع جو وزیراعلیٰ کیلئے مشکلات بھی پیدا کرسکتا ہے۔

مزید : قومی


loading...