ٹیسٹ جیتنے پر ٹیم کو مبارکباد

ٹیسٹ جیتنے پر ٹیم کو مبارکباد

  



پاکستان کرکٹ ٹیم نے ایک مرتبہ پھر ثابت کر دیا کہ یہ کچھ بھی کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے،حتیٰ کہ بیٹسمین مٹی کا ڈھیر ثابت ہونے کے بعد لوہے کی دیوار بھی بن سکتے ہیں، کرکٹ ٹیم نے دبئی ٹیسٹ میں بہت ہی حیرت انگیز کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور نیوزی لینڈ کی ٹیم سے صرف چار رنز کے فرق سے پہلا میچ ہارنے کے بعد دوسرے ٹیسٹ میں اُسے ایک اننگز اور16رنز سے ہرا دیا۔ اس کا سہرا باؤلنگ خصوصاً نوجوان یاسر شاہ کے سر بندھتا ہے، جس نے ایک ٹیسٹ میں 14=6+8 وکٹیں لے کر کئی ریکارڈ بنائے ہیں۔ لیگ سپنر یاسر شاہ ایک ایسے لیگ سپنر ہیں، جن کی تعریف غیر ملکیوں نے بھی کی تھی اور کی ہے۔ خصوصی طور پر اِس نوجوان کے ڈیبیو پر دُنیا کے مانے ہوئے لیگ سپنر آسٹریلیا کے شین وارن نے کہا تھا، مستقبل اِس کا ہے، یاسر شاہ نے اِس سے پہلے بھی ریکاڈ بنائے تاہم دبئی ٹیسٹ میں اُس کی باؤلنگ کارکردگی اب تک کے کھیل میں سب سے بہترین ہے اور وہ مبارک باد کے بھی مستحق ہیں کہ کئی اُتار چڑھاؤ بھی دیکھے۔ ایک مرحلے پر سلیکٹر مایوس نظر آ رہے تھے۔ تاہم حالیہ ٹیسٹ سیریز نے ثابت کر دیا کہ وہ فارم ہی میں نہیں آئے، بلکہ دُنیا بھر میں بہترین باؤلر کا اعزاز بھی رکھتے ہیں۔یاسر شاہ کی اس کارکردگی پر تحسین سے یہ نہ سمجھا جائے کہ باقی ٹیم پر ترجیح دی جا رہی ہے۔ ایسی کوئی بات نہیں، بابر اعظم، حارث سہیل اور اظہر علی بھی مبارک کے مستحق ہیں کہ میچ جیتے وہ بھی ایک اننگز کے فرق سے، صرف باؤلنگ ہی کا حصہ نہیں، ان نوجوانوں کی ہمت اور باوقار بیٹنگ ہی نے باؤلرز کو موقع دیا کہ وہ حوصلہ سے باؤلنگ کرا سکیں اور ایسا ہوا، یہ ایک ایسا میچ تھا، جس میں طویل عرصہ کے بعد ٹیم یکجان نظر آئی۔بیٹنگ اور باؤلنگ کے بعد کھلاڑیوں نے اچھی فیلڈنگ بھی کی اور کھیل کے ہر شعبہ میں نیوزی لینڈ کو مات دی۔ یوں سیریز ایک ایک سے برابر ہو گئی اور تیسرا میچ فائنل کی حیثیت اختیار کر گیا اس میں ٹیم کو کارکردگی میں برتری ثابت کرنا ہو گی۔ٹیم کے کپتان سرفراز احمد پر بورڈ اور چیف کوچ کی مہربانیوں میں اضافہ ہو رہا ہے تاہم شائقین کا ایک بڑا طبقہ تسلیم کرنے کو تیار نہیں جو سمجھتے ہیں کہ ہر فارمیٹ کے الگ الگ کپتان والی بات مضحکہ خیز نہیں، عملی مشکل آسان کرنے والی ہے۔سرفراز احمد کو خود ہی اپنی کارکردگی کا جائزہ لینا چاہئے کہ کیا خامی رہ گئی۔بہتر ہو گا کہ وہ ابتدائی طور پر باعزت طریقے سے اپنی پسند والے فارمیٹ کے سوا دوسرے فارمیٹ سے ریٹائرمنٹ لے لیں یا پھر ان کو ریسٹ دیا جائے، ہماری طرف سے اس یقین اور اعتماد کے ساتھ ٹیم اور قوم کو مبارک کہ اچھا کھیلے اور اچھا جیتے، اللہ کرے حسن کارکردگی اور زیادہ!

مزید : رائے /اداریہ


loading...