جندول ،تحصیل کونسل ثمر باغ کی نشست خالی رہ جانے کا خدشہ

جندول ،تحصیل کونسل ثمر باغ کی نشست خالی رہ جانے کا خدشہ

  



جندول( نمائندہ پاکستان) سب ڈویژن جندول تحصیل کونسل ثمرباغ کا نشست تیسری مرتبہ پھر خالی رہ جانے کے خدشات پیدا ہو گئی ہیں ۔ گزشتہ سال جماعت اسلامی کے ٹکٹ پر کامیاب ممبر تحصیل کونسل سربلند خان کے تحریک انصاف میں شمولیت کے بعد یہ نشست خالی ہوا تھا جس کے بعد مذکورہ نشست پر دو مرتبہ ضمنی انتخابات ہوئے تاہم دونوں مرتبہ خواتین کی جانب سے ووٹ نہ ڈالیں جانے کی وجہ سے الیکشن کمیشن نے انتخابات کے نتائج کلعدم قرار دیئے ۔الیکشن کمیشن نے 23دسمبر کو اسی نشست پر ایک مرتبہ پھر ری پولنگ کا اعلان کر دیا ہے ۔الیکشن کمیشن ذرائع کے مطابق اس نشست پر کسی بھی پارٹی کی جانب سے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کی ضرورت نہیں بلکہ وہی امیدواران جو گذشتہ ضمنی بلدیاتی انتخابات میں مدمقابل تھے تیسری مرتبہ پھر مد مقابل ہونگے ۔ عوامی نیشنل پارٹی ذرائع کے مطابق ان کا سابق امیدوار حاجی عقیل محمد تحریک انصاف میں شامل ہو چکا ہے اس لئے وہ لالٹین کے نشان انتخابات نہیں لڑ سکتا ہے دوسری جانب تحریک انصاف کا امیدوار سربلند خان بھی ویزیٹ پر بیرون ملک چلا گیا ہے اور جماعت اسلامی نے بھی تا حال کسی قسم کی سرگرمی کا آغاز نہیں کیا اس لئے سیاسی حالات سے پتہ چلتا ہے کہ اس نشست پر ایک مرتبہ پھر انتخابات نہیں ہو سکے گے ۔ دوسری جانب مقامی لوگوں کے مطابق سب ڈویژنل ہیڈ کوارٹر ثمرباغ میں تحصیل ممبر کے عدم موجودگی کی وجہ سے ثمرباغ یونین کونسل فنڈ سے محروم ہے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...