نایاب مچلیوں کی افزائس نسل کیلئے 23لاکھ کے فنڈز 10لاکھ مچلیاں دریاؤں میں چھوڑنے کا فیصلہ

نایاب مچلیوں کی افزائس نسل کیلئے 23لاکھ کے فنڈز 10لاکھ مچلیاں دریاؤں میں ...

  



پشاور( سٹی رپورٹر)ضلع ناظم پشاورمحمدعاصم خان نے پشاورمیں بہنے والے د ریائے شاہ عالم ،دریائے ناگمان اوردریائے کابل میں4 اقسام پر مچھلیوں کے افزائش نسل بڑھانے کیلئے 23 لاکھ روپے کے فنڈز سے 10 لاکھ چھوٹی مچھلیاں چھوڑنے کا فیصلہ کیاہے جبکہ کرنٹ سے مچھلی پکڑنے پر پابندی عائد کردی گئی ہے اس حوالے سے فشریز کمیٹی کا اجلاس زیر صدارت ضلع ناظم پشاورمحمدعاصم خان منعقد ہواجس میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر فشریز فواد خان خلیل ،فشریز کمیٹی و ضلع کونسل ممبر نصراللہ، پی ایس او نصر ت اللہ ، پی آر او فیروزشاہ سمیت دیگر نے شرکت کی اجلاس میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر فشریز نے ضلع ناظم کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایاکہ اپریل سے اگست کے مہینے تک مچھلیوں کی بریڈنگ ہوتی ہے اورماحولیاتی مسائل کی وجہ سے پاکستان میں 100 مچھلیوں کے بچوں میں صرف دس بچے زندہ بچ جاتے ہیں اور پشاور کے دریاؤں میں مچھلیوں کے افزائش نسل بڑھانے کیلئے مچھلیوں کے بچے چھوڑناضروری ہیں انہوں نے کہاکہ متنی اضاخیل ڈیم میں مچھلیوں کی افزائش نسل کرکے چھوٹے بچے دریائے شاہ عالم ،دریائے ناگمان اوردریائے کابل میں چھوٹی مچھلیاں مئی سے جون اور جولائی سے اگست کے مہینے میں چھوڑنا لازمی ہے جس کے لیے 20 لاکھ روپے فنڈز کی اشد ضرورت ہے ضلع ناظم نے فوری طور پر 20 لاکھ روپے فنڈز فراہمی کے احکامات جاری کرتے ہوئے ابھی سے مچھلیوں کے سیڈ کیلئے اقدامات اٹھا نے کی ہدایت کی اس موقع پر ضلع ناظم پشاورمحمدعاصم خان نے کہاکہ مچھلیوں کی نسل کشی کی روک تھام کیلئے فشریز واچرز کو ہر قسم کی سہولت مہیاکی جائیگی ،جبکہ کرنٹ پر مچھلیوں پکڑنے پر پابندی عائد کردی ہے تاکہ مچھلیوں کی نایاب نسل دریاؤں میں محفو ظ ہوسکیں ، انہوں نے مئی جون ،جولائی اور اگست کے مہینے میں 10 لاکھ چھوٹی مچھلیاں دریاؤں میں چھوڑ نے کیلئے ابھی سے منصوبہ بندی شروع کرنے کی ہدایت کی -

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...