اسحق ڈار کیخلاف ریفرنس، نیب کو جواب جمع کروانے کی آخری مہلت

اسحق ڈار کیخلاف ریفرنس، نیب کو جواب جمع کروانے کی آخری مہلت

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر ) احتساب عدالت نے سابق وزیر خزانہ اسحق ڈار کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات ضمنی ریفرنس میں نیب کو جوابات جمع کروانے کے لیے آخری مہلت د یتے ہوئے آئندہ سماعت پر استغاثہ کے گواہ نجی بینک کے آپریشن مینیجر محمد آفتاب کو طلب کرلیا ۔تفصیلات کے مطابق سابق وزیر خزانہ اسحق ڈار کے خلاف آمدنی سے زائد اثاثہ جات کے ضمنی ریفرنس پر سماعت ہوئی۔ سماعت احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے کی۔سماعت میں کیس کے شریک ملزمان سابق صدر نیشنل بینک سعید احمد، نعیم محمود اور منصور رضوی عدالت میں پیش ہوئے۔استغاثہ کے گواہ محمد نعیم اللہ نے بیان قلمبند کروایا جبکہ ڈپٹی ڈائریکٹر نیب اقبال حسن کا بیان بھی قلمبند کر کے ان پر جرح مکمل کرلی گئی۔مزید گواہوں میں سہیل عزیز، محمد نعیم اللہ، ذوار اور اقبال حسین شامل ہیں۔ 2 گواہوں کا تعلق نجی بینک جبکہ 2 گواہوں کا تعلق نیب سے ہے۔سماعت کے دوران اسحق ڈار کی گلبرگ کی رہائش گاہ کی ضبطگی کے خلاف درخواست پر نیب نے جواب جمع نہیں کروایا جس پر عدالت نے نیب کو جواب جمع کروانے کے لیے آخری مہلت دے دی۔جج نے استفسار کیا کہ اسحق ڈار کی اہلیہ تبسم ڈار کی درخواست پر جواب جمع کیوں نہیں کروایا جارہا؟ نیب پراسیکیوٹر نے استدعا کی کہ جواب تیار نہیں ہوا، مزید مہلت دی جائے۔عدالت نے کہا کہ آخری مہلت دے رہے ہیں، آئندہ سماعت پر جواب جمع کروائیں۔عدالت نے کیس کی مزید سماعت 5 دسمبر تک ملتوی کردی۔ آئندہ سماعت پر استغاثہ کے گواہ نجی بینک کے آپریشن مینیجر محمد آفتاب کو طلب کرلیا گیا۔

اسحق ڈار

مزید : صفحہ آخر


loading...