تعلیمی اداروں کے گراؤنڈز کو ترقیاتی منصوبوں کیلئے استعمال کرنے پرایل ڈی اے کو5سال کا کرایہ متعلقہ اداروں کو ادا کرنے کا حکم

تعلیمی اداروں کے گراؤنڈز کو ترقیاتی منصوبوں کیلئے استعمال کرنے پرایل ڈی اے ...

  



لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس علی اکبر قریشی نے تعلیمی اداروں کے گراؤنڈز کومیٹرو بس اور اورنج لائن ٹرین کے ترقیاتی منصوبوں کے لئے استعمال میں لانے کے معاملہ پرایل ڈی اے کو5سال کا کرایہ متعلقہ تعلیمی اداروں کو ادا کرنے کا حکم دے دیاہے ۔عدالت نے متعلقہ کنسٹرکشن کمپنیوں کو ان گراؤنڈز کی بحالی کے لئے 4دن کی مہلت دیتے ہوئے انہیں زیر زمین پانی کے استعمال کے اخراجات بھی ایل ڈی اے کوادا کرنے کی ہدایت کی ہے ۔عدالتی حکم پر چیف ایگزیکٹو سیف سٹی پراجیکٹ ناصر اکبر خان اورایم ڈی واسا عدالت میں پیش ہوئے،ایم ڈی واسا کی طرف سے عدالت کو بتایا گیا کہ میٹروبس اور اورنج لائن ٹرین منصوبے کے لئے پانی ٹیوب ویل کے ذریعے زمین سے نکالا گیا ۔درخواست گزار اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ ایل ڈی اے نے اس بابت کوئی کارروائی نہ کرکے مجرمانہ غفلت کا ارتکاب کیا ہے ،انہوں نے کہا کہ بچوں سے ان کے کھیلنے کے گراؤنڈز چھین لئے گئے اوران پر قبضہ کرکے انہیں میٹرو بس اور اورنج لائن ٹرین کے منصوبوں کے لئے استعمال میں لایا گیا۔

،انہوں نے عدالت کوبتایا کہ پنجاب یونیورسٹی اور گورنمنٹ کالج لاہور یونیورسٹی کے گراؤنڈز کو مذکورہ ترقیانی منصوبوں کے لئے استعمال میں لایا گیااور تاحال یہ گراؤنڈز بحال نہیں ہوسکے ہیں،عدالت نے مزید سماعت 3دسمبر تک ملتوی کردی ہے۔

کرایہ اداکرنیکاحکم

مزید : علاقائی