الوداع کہنے تاخیر سے کیوں پہنچے ، وزیر اعلٰی نے ڈپٹی کمشنر ، ڈی پی او سیالکوٹ کو عہدوں سے ہٹا دیا

الوداع کہنے تاخیر سے کیوں پہنچے ، وزیر اعلٰی نے ڈپٹی کمشنر ، ڈی پی او سیالکوٹ ...

  



سیالکوٹ ( آن لائن )وزیراعلی پنجاب ایک بار پھر بیورو کریسی کے ساتھ الجھ گئے ۔ سیالکوٹ کے غیر اعلانیہ کے دورہ کے موقع پر ڈی سی اور ڈی پی او سیالکوٹ وزیر اعلیٰ کی گاڑی کے ہمراہ بروقت سیالکوٹ نہ پہنچنے کیوجہ سے عہدوں سے ہٹا دئیے گئے۔ دونوں افسران گاڑی کے معمولی حادثے کی وجہ سے چند منٹ تاخیر سے پپہنچے تھے۔ تفصیلات کے مطابق پاکپتن کے ڈی پی او رضوان گوندل کے تنازعے سے بمشکل بچ نکل جانے والے وزیر اعلٰی پنجاب عثمان بزدار نے اس بار اپنے سینگ ڈی پی او سیالکوٹ عبدالغفار قیصر انی اور ڈی سی او طاہر وٹو کے ساتھ پھنسالئے۔ وزیراعلی پنجاب گزشتہ روز غیر اعلانیہ دورے پر سیالکوٹ پہنچے تھے تاہم انکی روانگی پر انہیں الوداع کہنے کے لیے ڈی سی او اور ڈی پی او چند منٹ تاخیر سے پہنچے جسکی وجہ یہ بتائی گئی کہ وہ راستے میں ایک دوسری گاڑی کے ساتھ معمولی حادثے کا شکار ہوگئے تھے۔ تاہم وزیراعلٰی پنجاب نے اس عذر کو رد کرتے ہوئے دونوں افسران کوعہدوں سے ہٹانے کاحکم جاری کردیا۔ رضوان گوندل ڈی پی او کے بعد بیورو کریسی کے ساتھ یہ انکا دوسرا بڑا تنازعہ ہے۔

معطل

مزید : صفحہ اول


loading...