غیر ملکی ماڈل منشیات سمگلنگ کیس، ترمیمی چالان پر بحث

غیر ملکی ماڈل منشیات سمگلنگ کیس، ترمیمی چالان پر بحث

  



لاہور(نامہ نگار)منشیات سمگلنگ کیس میں ملوث غیر ملکی ماڈل ملزمہ کوسیشن عدالت میں پیش کیا گیا،گزشتہ روز کسٹم کی جانب سے ترمیمی چالان پر عدالت میں بحث ہوئی ،ملزمہ کے وکیل کا کہنا ہے کہ فرد جرم عائد ہونے کے بعد نیا چالان پیش کرنا خلاف قانون ہے ،عدالت نے مزید بحث کے لئے کیس کی سماعت سماعت 30 نومبر تک ملتوی کر دی۔ایڈیشنل سیشن جج علی رضا کیس کی سماعت کی،چیک ری پبلک سے تعلق رکھنے والی ماڈل ٹریزا ہلسکوواکو جیل سے لاکرسیشن عدالت میں پیش کیا گیا،ترمیمی چلان پر بحث کرتے ہوئے ملزمہ کے وکیل نے اپنے دلائل میں کہا کہ کسی ملزم پر فرد جرم عائد ہونے کے بعد ترمیمی چالان پیش نہیں کیا جا سکتا ،کسٹم کے پاس اب تک کوئی ٹھوش شواہد نہیں ،کیس کو لٹکانے کے لئے نیا چالان پیش کیا گیا ہے ،منشیات برآمد ہونے کا الزام بے نبیاد ہے ملزمہ چیک ری پبلک کی شہری ہے ،وہ ماڈلنگ کے لئے پاکستان آئی تھیں جبکہ کسٹم کے مطابق ملزمہ کو منشیات بیرون ملک سمگل کرنے کی کوشش کرتے ہوئے لاہور ائیر پورٹ سے گرفتار کیا گیا ہے۔

اور اس کے سامان سے ساڑھے 8کلو ہیروئن برآمد ہوئی ہے ۔

مزید : علاقائی