پرویز الٰہی دور کے منصوبوں کی لاگت میں اضافہ کے ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کا فیصلہ

پرویز الٰہی دور کے منصوبوں کی لاگت میں اضافہ کے ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کا ...

  



لاہور( ش،م)پنجاب حکومت نے چودھری پرویز الٰہی دور کے منصوبوں کی تکمیل میں تاخیر پر بڑھنے والی لاگت کے ذمہ دار مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں کیخلاف اینٹی کرپشن اور نیب سے تحقیقات کروانے کی تیاریاں شروع کردیں، سپیکر پنجاب اسمبلی کی طرف سے قائم کردہ تحقیقاتی کمیٹی کے کنوینر صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت نے سپیشل کمیٹی 2 کے آج منعقد ہونیوالے اجلاس میں محکمہ سکولز، آیپاشی،ہاؤسنگ، لوکل گورنمنٹ، صحت سمیت9محکموں کے سیکرٹریوں کوریکارڈ سمیت طلب کر لیا ۔تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ(ق)کے دور کے منصوبوں پنجاب اسمبلی کی نئی عمارت، میو ہسپتال سرجیکل ٹاور، وزیر آباد کارڈیالوجی اور مری میں واٹر سپلائی کی سکیموں سمیت متعدد منصوبے مسلم لیگ(ن) کی حکومت میں تاخیر کا شکار ہوئے تھے جس سے ان منصوبوں پر تخمینہ جات بڑھ جانے پر قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچا ۔ اسمبلی سیکرٹریٹ کے مطابق سپیشل کمیٹی نمبر 2 کے اجلاس میں9محکموں کے سیکرٹریز کو متعلقہ منصوبوں کے حوالے سے ریکارڈ ہمراہ لانے کی ہدایت کی گئی ، ریکارڈ کی روشنی میں یہ کمیٹی منصوبوں میں تاخیر کے ذمہ داروں کا تعین کرکے ایوان کو آگاہ کرے گی جس کے بعد ایوان سے منظوری لے کر ذمہ داروں کے خلاف کیس اینٹی کرپشن اور نیب کو بھجوائے جائیں گے۔

کارروائی کا فیصلہ

مزید : صفحہ اول


loading...