خشوگی قتل کے باوجود امریکہ سعودی عرب تعلقات عرب متاثر نہیں ہونگے : پومپیو

خشوگی قتل کے باوجود امریکہ سعودی عرب تعلقات عرب متاثر نہیں ہونگے : پومپیو

  



واشنگٹن (اظہر زمان، بیوروچیف) سعودی صحافی جمال خشوگی کے قتل کے باوجود امریکہ کے سعودی عرب کیساتھ تعلقات متاثر نہیں ہونگے، کیونکہ ان دونوں ممالک کی شراکت بہت اہمیت رکھتی ہے۔ اس رائے کا اظہار امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے ’’وال سٹریٹ جرنل‘‘ کی تازہ اشاعت میں چھپنے والے ایک خصوصی مضمون میں کیا ہے۔ وہ لکھتے ہیں ’’ٹرمپ انتظامیہ امریکہ اور سعودی عرب کی شراکت کی تعمیر نو کی جو کوششیں کر رہی ہے، اسے واشنگٹن کے سیاسی حلقوں میں مقبولیت حاصل نہیں ہوسکی۔ اس کی وجہ یہ ہے دونوں جماعتوں کے سیاستدا نو ں نے بادشاہت کے انسانی حقوق کے ریکارڈ کو مدنظر رکھتے ہوئے ہمیشہ سعودی عرب کیساتھ اشتراک کو کم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔‘‘ امریکی وزیر خارجہ کہتے ہیں خوشگی کے قتل کے بعد کانگریس کے تحفظات اور میڈیا کی تنقید کا معاملہ بہت آگے بڑھ گیا ہے،سعودی امریکہ تعلقات کو گھٹانے کی کوشش امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی قومی سلامتی کے اعتبار سے سنگین غلطی ہوگئی۔ وہ سوال کرتے ہیں کیا یہ محض ایک اتفاق ہے کہ وہ لوگ جو خشوگی کے قتل کو صدر ٹرمپ کیخلاف تنقید کا ایک جواز بنا رہے ہیں۔ یہ وہی لوگ ہیں جو صدر اوبامہ کی اس ایران کیساتھ مفا ہمت کی پالیسی کی حمایت کرتے تھے، جس کی حکومت دنیا بھر میں ہزاروں افراد کے قتل میں ملوث ہے اور قتل ہونیوالوں میں امریکی بھی شا مل ہیں۔امریکی وزیر خارجہ کے دعویٰ کیا سعودی عرب اس خطرے سے پوری طرح آگاہ ہے جو ایران کی وجہ سے پوری دنیا کو درپیش ہے ۔ وہ لکھتے ہیں ’’صدر ٹرمپ نے ردعمل کے طور پر ان اکیس سعودی باشندوں کو امریکہ داخل ہونے کیلئے نااہل قرار دیتے ہوئے ان کا ویزہ منسوخ کر دیا ہے جن پر خشوگی کے قتل کا شبہ ہے۔ انہوں نے خبردار کیا اگر مزید حقائق سامنے آئے تو امریکہ مزید سزاؤں کا اعلان کرسکتا ہے۔

پومپیو

مزید : صفحہ اول


loading...