نیب کی درخواست مسترد،نواز شریف کو سوالنامہ دیدیا گیا

نیب کی درخواست مسترد،نواز شریف کو سوالنامہ دیدیا گیا

  



اسلام آباد(آئی این پی ) احتساب عدالت میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد سابق وزیر اعظم نواز شیریف کیخلاف فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت کے دوران قومی احتساب بیورو (نیب)کے تفتیشی افسر محمد کامران نے کہا ہے کہ نواز شریف کے اپنے بیٹے حسن نواز کی کمپنی میں سرمایہ کاری کے دستاویزی شواہد نہیں، واقعاتی شواہد موجود ہیں، دستاویزی شواہد نہ ہونے کا یہ مطلب نہیں کہ 302 ملین پانڈ کا سرمایہ لگایا ہی نہیں گیا ، یہ کہنا غلط ہوگا کہ میں کسی بدنیتی سے یہ وضاحت دے رہا ہوں۔دوسری طرف سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف فلیگ شپ ریفرنس میں تفتیشی افسر پر جرح مکمل کرلی گئی جس کے بعد احتساب عدالت نے نیب کی درخواست مسترد کرتے ہوئے سوالنامہ نواز شریف کو دینے کا فیصلہ سنادیا۔نیب نے فلیگ شپ ریفرنس میں نواز شریف کو تحریری سوالنامہ فراہم نہ کرنے اور پہلے دفاع کو حتمی دلائل دینے کی درخواست کی تھی تاہم عدالت نے نیب کی دونوں درخواستیں مسترد کردیں۔عدالت نے فلیگ شپ ریفرنس میں شواہد کی تکمیل کا بیان دینے کے لیے کل کی تاریخ مقرر کردی اور سابق وزیراعظم کو 62 سوالات دے دیے گئے۔احتساب عدالت میں کل العزیزیہ ریفرنس کی سماعت ہوگی اور نیب پراسیکیوٹر حتمی دلائل شروع کریں گے جب کہ فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت بھی آج تک کیلئے ملتوی کردی گئی۔

مزید : کراچی صفحہ اول