جتوئی،بداخلاقی کیس،گرفتارملزموں کوحوالات میں پروٹوکول،مدعی دربدر

جتوئی،بداخلاقی کیس،گرفتارملزموں کوحوالات میں پروٹوکول،مدعی دربدر

  



مظفرگڑھ(نامہ نگار)جتوئی میں کار ڈرائیونگ جھانسہ بداخلاقی کیس میں پندرہ روز سے دو گرفتار ملزمان سے تفتیش کا دائرہ وسیع نہ ھو سکا، جتوئی پولیس گرفتار ملزمان کو پروٹوکول فراہم کرنے لگ(بقیہ نمبر30صفحہ12پر )

گی تفصیل کے مطابق چوک پرمٹ کے نزدیک پھلن شریف میں عرصہ دراز سے ملزمان بشیر قادری, محمد عاصم وغیرہ بچوں کو کار ڈرائیونگ کا جھانسہ دیکر پھر ان سے بداخلاقی کرتے ھوئے انکی ویڈیوز بنا کر بچوں کے والدین کو بلیک میل کرتے ھوئے ان سے لاکھوں روپے لیتے تھے, پندرہ روز قبل پھلن شریف کے امام مسجد ظہور احمد کے بچے کو ملزمان نے کار ڈرائیونگ کا جھانسہ دیتے ھوئے بچے کے ساتھ بداخلاقی کرتے ھوئے اسکی ویڈیو بنا لی اور بچے کے والد سے دو لاکھ کا ملزمان نے تقاضا کیا رقم نہ دینے پر ملزمان نے ویڈیوز انٹرنیٹ پر ڈال دی جتوئی پولیس حرکت میں آئی تو ملزمان کے قبضے سے ویڈیوز برآمد کرتے ھوئے دو ملزمان کو گرفتار کر لیا لیکن پندرہ روز گزرنے کے باوجود بھی جتوئی پولیس نے دیگر ملزمان کی گرفتاری عمل میں نہ لائی اور نہ ھی گرفتار ملزمان کو جسمانی ریمانڈ لیا ,بلکہ گرفتار ملزمان کو تفتیشی اللہ ڈتہ دن حوالات میں مکمل پروٹوکول فراہم کررہا ہے مدعی ظہور احمد کے مطابق تفتیشی ملزمان کے ساتھ صلح کے لیے دباو ڈال رہا ہے صلح نہ کرنے کی صورت میں مقدمہ خارج کرنے کی دھمکیاں دیتا ہے, تفتیشی افیسر نے رابطہ پر بتایا کہ ملزمان سے تفتیش کررہے ہیں دیگر الزامات بے بنیاد ہیں جبکہ متاثرہ خاندان آج آر پی او ڈیرہ غازیخان سے ملاقات کریگا ۔

دربدر

مزید : ملتان صفحہ آخر