تارہ پور بارڈر کھولنے کا فیصلہ کر کے وزیر اعظم نئی تاریخ رقم کر دی، مومنہ وحید

تارہ پور بارڈر کھولنے کا فیصلہ کر کے وزیر اعظم نئی تاریخ رقم کر دی، مومنہ وحید

  



راولپنڈی (سٹی رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف کی رکن پنجاب اسمبلی مومنہ وحید نے کہا ہے کہ کرتارپورہ بارڈر کھولنے کا فیصلہ کرکے وزیراعظم پاکستان عمران خان نے ایک نئی تاریخ رقم کر دی ہے۔ پاک بھارت تعلقات میں بہتری لانے اور دونوں ملکوں کے درمیان دوستانہ روابط کو فروغ دینے کا اس سے بہتر قدم اور کوئی نہیں ہو سکتا۔انہوں نے کہا کہ کرتارپورہ راہداری کھولنے کا فیصلہ خوش آئند ہ ہے ،71 سال بعد عمران خان کی قیادت میں پاکستان کی حکومت نے ایسا فیصلہ کیا ہے جس سے بھارت سمیت دنیا بھر کے سکھ یاتریوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے اس مستحسن اقدام سے آنے والے وقتوں میں پاکستان اور بھارت کے مابین دوطرفہ تعلقات میں بہتری آئے گی۔ امن اور محبت کی فضاء قائم ہو گی اور دونوں ملکوں میں ہم آہنگی کو فروغ حاصل ہو گا۔ ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم پاکستان نے اپنے خطاب میں بھارت کو دعوت دی تھی کہ اگر بھارت پاکستان کی طرف طرف دوستی کا ایک قدم بڑھائے گا تو ہم دو قدم بڑھائیں گے اور انہوں نے سکھ یاتریوں کے مقدس مقام تک رسائی کے لئے کرتارہ پورہ کو یڈور کھولنے کا فیصلہ کرکے بھارت سے خیر سگالی کے جس جذبے کا اظہار کیا ہے اسے دنیا بھر میں سراہا جا رہاہے۔ مومنہ وحید نے کہاکہ وزیر اعظم عمران خان خطے میں امن، ترقی ، خوشحالی اور باہمی تعاون کے خواہاں ہیں اور انہوں نے بھارت کی طرف بھی دوستی کا ہاتھ بڑھایا ہے جس پر وہ مبارک باد کے مستحق ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت پر امن بقائے باہمی کی قائل ہے اور وزیر اعظم پاکستان کے حالیہ بیرونی دوروں کے دوران انہوں نے سربراہان مملکت کو امن اورترقی اور استحکام کے لئے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا ہے جس کا خیر مقدم کیا گیا ہے۔ ایم پی اے مومنہ وحید نے کہاکہ پاکستان پیاراور محبت کی فضاء قائم رکھنا چاہتا ہے کرتار پور بارڈز کھلنے سے ایل او سی کے قریب آباد شہریوں کو خاطرخواہ سہولیت حاصل ہوگی ۔ انہوں نے کہاکہ ہم سکھ یاتریوں کو اپنی سرزمین پر خوش آمدید کہتے ہیں اور ان کے تحفظ کی یقین دہانی کراتے ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر