ای فاؤنڈرز فیلو شپ کا چوتھا ایڈیشن کامیابی سے مکمل

ای فاؤنڈرز فیلو شپ کا چوتھا ایڈیشن کامیابی سے مکمل

  



کراچی(پ ر)38 ایشین انٹرپرینیورز نے ای فاؤنڈرز فیلو شپ کے چوتھے ایڈیشن کو کامیابی سے مکمل کیا ہے جو تجارت و ترقی کے بارے میں اقوام متحدہ کانفرنس اور علی بابا بزنس سکول کا مشترکہ منصوبہ ہے۔ اس فیلو شپ کا مقصد ڈیجیٹل تفریق کو دور کرنا اور نوجوانوں کاروباری افراد کو کاروباری ہنر سے آراستہ کرنا اور متعلقہ معاشروں میں نئے علم کے حصول کے تبادلے کی حوصلہ افزائی کرنا ہے۔ ای فاؤنڈرز کلاس کے چوتھے ایڈیشن کی گریجویشن کا مطلب یہ ہے کہ علی بابا اپنے بانی اور علی بابا گروپ کے ایگزیکٹو چیئرمین جیک ما کی طرف سے کئے گئے وعدے کی تکمیل کے ہدف پر گامزن ہے جو جیک ماہ یو این سی ٹی اے ڈی کے خصوصی مشیر برائے ینگ انٹرپرینیورز اینڈ سمال بزنس کی حیثیت سے انجام دے رہے ہیں۔ یہ عزم آئندہ پانچ برسوں میں ڈیجیٹل معیشت کے ذریعے پائیدار اور ہمہ جہت اقتصادی ترقی کے لئے چیمپئنز کی تشکیل کے ذریعے ترقی پذیر ممالک میں ایک ہزار انٹرپرینیورز کو بااختیار بنانے کا حامل ہے۔ یو این سی ٹی اے ڈی ای فاؤنڈر فیلو شپ پروگرام کے کوآرڈینیٹر آر لیٹی ورپلوگ نے کہا کہ یہ اقدام ہمہ جہت اور پائیدار ترقی کے لئے ڈیجیٹل ٹرانسفارمیشن اور جدت کے حوالے سے بین الاقوامی برادری کی کاوشوں کا بھی مظہر ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوجوان کاروباری افراد پر سرمایہ کاری دیگر کاروباری افراد کو جدید معاشی مواقع اور چیلنجوں کے بارے میں آگاہی میں معاونت کی کاوشوں میں معاون ہو سکتی ہے۔38 ایشین انٹرپرینیورز جنہوں نے پروگرام میں گریجویشن کی، ان میں سے چھ کا تعلق پاکستان سے ہے جن میں ہنر مند سے علیزہ گوہر، Secret Stash سے نازش حسین، Finja سے عمر منور، بائیکیا پاکستان سے منیب میئر، گروسر ایپ کے حسن صادق اور BookMyUmrah سے خرم میر شامل ہیں۔ انٹرپرینیورز کو فراہم کیا جانے والا نیا مطابقتی نصاب علی بابا کے چھوٹے پیمانے سے آغاز سے لے کر ایک کامیاب ٹیکنالوجی کے حامل ادارہ تک کے سفر کے بارے میں تھا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...