حکومت ویلنگ طریقہ کار کے ذریعہ صنعتوں کو سستی بجلی فراہم کرے گی

حکومت ویلنگ طریقہ کار کے ذریعہ صنعتوں کو سستی بجلی فراہم کرے گی

  



پشاور( سٹاف رپورٹر)مشیر وزیر اعلیٰ برائے توانائی حمایت اللہ خان نے کہا ہے کہ حکومت ویلنگ طریقہ کار کے ذریعے صنعتوں کو سستی بجلی فراہم کرے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے صوابی میں پیخور ہائیڈروپاور پراجیکٹ گدون انڈسٹریل اسٹیٹ کے دورے کے موقع پر کیا اجلاس میں صدر گدون انڈسٹریل اسٹیٹ، صدر صوابی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری ، صدر سرحد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری فیض محمد ، جنرل منیجر پیڈو بہادر شاہ ، ایڈیشنل سیکرٹری ظفر اسلام ، سینئر پلاننگ آفیسر وقاص احمد اور دیگر صنعت کاروں نے شرکت کی۔ مشیر توانائی نے کہا اگر صوبائی حکومت ویلنگ پاور ماڈل میں کامیاب ہو جاتی ہے تو یہ صوبے کا بہت بڑا کارنامہ ہوگا اور اس کا فائدہ پورے صوبے کو ہوگااور اس کو ہم مختلف جگہوں پر ماڈل کے طور پر پیش کر سکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت سارے سٹیک ہولڈرز کے مشورے کے ساتھ اس ماڈل پر کام کر نا چاہتی ہے۔ حمایت اللہ خان نے کہا کہ پیخور ہائیڈرو پاور پراجیکٹ گدون انڈسٹریل اسٹیٹ میں واقع ہے اسلئے ہم صنعتوں کو آسانی کے ساتھ بجلی مہیا کر سکتے ہیں۔ مشیر توانائی نے کہا کہ اگلے ہفتے وفاقی وزیر برائے توانائی عمر ایوب خان پشاور آرہے ہیں ان کے ساتھ بھی ہم اس پر بات چیت کرینگے۔حمایت اللہ خان نے کہا کہ صنعتوں کو سستی بجلی فراہم کرنا حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے کیونکہ جب صنعتیں ترقی کرینگے تو ملک ترقی کریگا۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کے پاس 2019کے آخر تک تقریبا 200میگا واٹ مزید بجلی آجائیگی جس کا صوبے کو بھر پور فائدہ ہو گا ۔ صنعت کاروں نے کہا کہ گدون انڈسٹریل اسٹیٹ کو 120میگا واٹ بجلی کی ضرورت ہے جس میں ہم 40میگا واٹ خود پیدا کرتے ہیں۔ صدر گدون انڈسٹریل اسٹیٹ کا کہنا تھاکہ صنعتوں پر ایک فی صد لائن لاسز نہیں ہیں اور نہ ہی کوئی بجلی چوری کر تا ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...