پولیس اہلکارقتل کیس،سپریم کورٹ نے ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قراردیدیا،ملزم کو فوری رہا کرنے کا حکم

پولیس اہلکارقتل کیس،سپریم کورٹ نے ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قراردیدیا،ملزم ...
پولیس اہلکارقتل کیس،سپریم کورٹ نے ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قراردیدیا،ملزم کو فوری رہا کرنے کا حکم

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے پولیس اہلکار قتل کیس میں لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کو کالعدم قراردیتے ہوئے ملزم کو رہا کرنے کا حکم دیدیا،جسٹس آصف سعید کھوسہ ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ المیہ ہے قتل سب کے سامنے ہوتاہے لیکن پھربھی کوئی گواہ نہیں ہوتا،سچی گواہی ہوگی توکوئی عدالت ملزم کونہیں چھوڑے گی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں پولیس اہلکار قتل کیس میں عمر قید کی سزا کیخلاف اپیل پر سماعت ہوئی،عدالت نے لاہورہائیکورٹ کافیصلہ کالعدم قراردیتے ہوئے ملزم کو بری کرنے کا حکم دیدیا،عدالت نے 8 سال سزا کاٹنے والے ملزم بشیراحمد کی فوری رہائی کاحکم دیدیا۔جسٹس آصف سعید نے ریمارکس دیئے ہیں کہ المیہ ہے قتل سب کے سامنے ہوتاہے لیکن پھربھی کوئی گواہ نہیں ہوتا،سچی گواہی ہوگی توکوئی عدالت ملزم کونہیں چھوڑے گی،جھوٹے گواہ بناکرمقدمات خراب کردیئے جاتے ہیں۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد