پرموشن کیلئے ٹیکس گوشوارے لازمی قرار، پاک فوج سے 393 ملین کے محصولات جمع

پرموشن کیلئے ٹیکس گوشوارے لازمی قرار، پاک فوج سے 393 ملین کے محصولات جمع
پرموشن کیلئے ٹیکس گوشوارے لازمی قرار، پاک فوج سے 393 ملین کے محصولات جمع

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )ایف بی آر کے راہلکار حامد عتیق سرور نے بتایا کہ آرمی چیف نے ترقی پانے کیلئے ٹیکس گوشوارے جمع کروانے کی شرط کو لازمی قرار دیدیا ہے جو کہ ملٹری کی جانب سے ٹیکس کی بنیاد کو بڑھانے کیلئے شروع کی جانے والی مہم کی تائید کرتا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق پاک فوج ملک میں ٹیکس کی بنیاد بڑھانے کیلئے سنجیدہ ہے اور اسی کو مدنظر رکھتے ہوئے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے مدت ختم ہونے سے ایک ماہ قبل ہی اپنے ٹیکس گوشوارے ایف بی آر میں جمع کروا دیئے ہیں ۔ڈاکٹر حامد عتیق کا کہناتھا کہ اب تک پاک فوج سے مجموعی طور پر 393 ملین روپے ٹیکس اکھٹا ہو گیا ہے ۔ان کا کہناتھا کہ ٹیکس گوشوارے جمع کروانے میں پاک فوج بطور ادارہ سب سے زیادہ سرگرم ہے ۔ ایف بی آر کے ایک اور رکن سرور کاکہناتھا کہ نافائلر ہونا اب پاک فوج میں ترقی کے راستے کو متاثر کر سکتا ہے ۔

سرور کا کہناتھا کہ پاک فوج تقریبا 398 ملین روپے ماہانہ انکم ٹیکس کی صورت میں ادا کر رہی ہے جو کہ سالانہ تقریباً 4.8 ارب روپے بن جاتاہے ۔انہوں نے بتایا کہ پاک فوج اور اس کے رفاعی ادارے متعدد ٹرانزیکشن پر ود ہولڈنگ ٹیکس کی کٹوتی بھی کر رہے ہیں ۔

ایک روز قبل وزیر مملکت حماد اظہر نے اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ حکومت نے دیر 2017اور 18 کے دیر سے ٹیکس گوشوارے جمع کروانے والوں کو جرمانے سے چھوٹ دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔

مزید :

قومی -