سرکاری اشتہارات میں سیاسی عہدیداروں کی تصاویر لگانے سے متعلق کیس،سپریم کورٹ کا وزیراعلیٰ سندھ کو 15 روز میں پیسے جمع کرانے کا حکم

سرکاری اشتہارات میں سیاسی عہدیداروں کی تصاویر لگانے سے متعلق کیس،سپریم کورٹ ...
سرکاری اشتہارات میں سیاسی عہدیداروں کی تصاویر لگانے سے متعلق کیس،سپریم کورٹ کا وزیراعلیٰ سندھ کو 15 روز میں پیسے جمع کرانے کا حکم

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے سرکاری اشتہارات میں سیاسی عہدیداروں کی تصاویر لگانے سے متعلق کیس میں وزیراعلیٰ سندھ کو 15 روز میں پیسے جمع کرانے کا حکم دیدیا۔

چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے سرکاری اشتہارات میں سیاسی عہدیداروں کی تصاویرسے متعلق کیس کی سماعت کی،ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ سندھ نے رپورٹ جمع کرا دی ،جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ 14 لاکھ 6 ہزار روپے خرچ کئے ہیں،چیف جسٹس نے کہا کہ یہ پیسے وزیراعلیٰ سندھ دینگے یا ان کی پارٹی؟فیصلہ کریں یہ کس نے دینے ہیں،چیف جسٹس نے کہا کہ پنجاب کے سابق وزیراعلیٰ نے پیسے تو اپنی جیب سے دیئے تھے،عدالت نے وزیراعلیٰ سندھ کو 15 روز میں پیسے جمع کرانے کا حکم دیدیا۔

سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ کے پی کے حکومت نے جو اشتہارات دیئے ان کا کوئی خرچ نہیں دیاگیا ،چیف جسٹس نے کہا کہ کل پرویز خٹک کو بلا لیتے ہیں ،رپورٹ میں تو اشتہارات میں وزیراعلیٰ کے پیغام کا اشتہار ہے ،سرکاری وکیل نے بتایا کہ سیکرٹری اطلاعات کے پی کے عدالت کو گمراہ کر رہے ہیں،چیف جسٹس نے کہا کہ آپ کیس سنجیدہ نہیں لے رہے آپ کو 20 ہزار جرمانہ کرتے ہیں،عدالت نے سیکرٹری اطلاعات کے پی کے سے جواب طلب کرتےے ہوئے سماعت پیرتک ملتوی کردی۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /اسلام آباد


loading...