سوزوکی کمپنی کا پاکستان میں 45 کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے کا وعدہ لیکن ساتھ ہی انتہائی کڑی شرط لگادی، حکومت کو مشکل میں ڈال دیا

سوزوکی کمپنی کا پاکستان میں 45 کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے کا وعدہ لیکن ساتھ ...
سوزوکی کمپنی کا پاکستان میں 45 کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے کا وعدہ لیکن ساتھ ہی انتہائی کڑی شرط لگادی، حکومت کو مشکل میں ڈال دیا

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سوزوکی کمپنی نے حکومتِ پاکستان سے ملک میں 45ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے کا وعدہ کر لیا ہے تاہم ساتھ ہی ایک انتہائی کڑی شرط عائد کرکے حکومت کو مشکل میں بھی ڈال دیا ہے۔ ایکسپریس ٹربیون کے مطابق حکومت نے اس خواہش کا اظہار کیا تھا کہ پاک سوزوکی موٹر کمپنی 45کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کرے، جس پر کمپنی نے رضامندی ظاہر کر دی لیکن کہا کہ اگر ہم اس صورت میں مزید سرمایہ کاری کریں گے اگر پاکستان ہمیں بھی گرین فیلڈ سٹیس دے۔اس سٹیٹس کے تحت نئے سرمایہ کاروں کو ٹیکس کی مد میں خصوصی رعایتیں دی جارہی ہیں، جو پرانے سرمایہ کاروں کو حاصل نہیں۔

رپورٹ کے مطابق اگر حکومت سوزوکی کمپنی کی یہ شرط پوری کرنا چاہے تو اسے آٹوموبل پالیسی 2016ءمیں ترمیم کرنی پڑے گی۔ اس پالیسی میں واضح کیا گیا ہے کہ سوزوکی موٹرز سمیت تین جاپانی کارساز کمپنیوں کو گرین فیلڈ سٹیٹس نہیں دیا جا سکتا جو پہلے سے پاکستان میں سرمایہ کاری رکھتی ہیں۔وزارت صنعت کا کہنا ہے کہ ”اس وقت سوزوکی موٹرز کو براﺅن فیلڈ سٹیٹس حاصل ہے اور اگر پالیسی میں ترمیم نہیں کی جاتی تو سوزوکی موٹرز کی طرف سے کی جانے والی نئی سرمایہ کاری اسی سٹیٹس کے تحت آئے گی اور اسے ٹیکس میں رعایتیں نہیں مل سکیں گی۔“واضح رہے کہ دو سال قبل مسلم لیگ ن کی حکومت نے پالیسی میں ترمیم کرنے اور ان تینوں کمپنیوں کو گرین سٹیٹس دینے سے انکار کر دیا تھا۔ جس کی وجہ یہ تھی کہ ن لیگی حکومت کم از کم ایک یورپی اور کچھ ایشیائی کارساز کمپنیوں کو پاکستان میں لا کر ان تینوں جاپانی کارساز کمپنیوں کی اجارہ داری ختم کرنا چاہتی تھی۔

مزید : بزنس /علاقائی /اسلام آباد


loading...