اعظم سواتی کے واقعہ کے وقت ملک سے باہر تھا ، اصل صورتحال کاپتہ ہوتا تو غریب نہ پکڑے جاتے:وزیر مملکت برائے داخلہ

اعظم سواتی کے واقعہ کے وقت ملک سے باہر تھا ، اصل صورتحال کاپتہ ہوتا تو غریب نہ ...
اعظم سواتی کے واقعہ کے وقت ملک سے باہر تھا ، اصل صورتحال کاپتہ ہوتا تو غریب نہ پکڑے جاتے:وزیر مملکت برائے داخلہ

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر مملکت برائے داخلہ شہر یار آفریدی نے کہاہے کہ جب اعظم سواتی کا واقعہ ہوا تو میں ملک سے باہر تھا ، اگر صورتحال کا پتہ ہوتا تو غریب لوگ نہ پکڑے جاتے ۔

سما ءنیوز کے پرو گرام ”آواز “ میں گفتگو کرتے ہوئے شہریار آفریدی نے کہاہے کہ جب اعظم سواتی کا واقعہ ہوا تو میں ملک سے باہر تھا اور تافتان میں تھا ، اگر مجھے پتہ ہوتا کہ غریبوںلوگوں اور خواتین کو گرفتار کیا گیاہے تو یہ کبھی نہ ہوتا ، اگر میں ملک میں ہوتا اورمجھے پتہ ہوتا تو ایسا واقعہ کبھی نہ ہوتا ۔ انہوں نے کہا کہ میں ڈی آئی جی کے ساتھ متاثرہ خاندان کے گھر گیا اوروہاں کے لوگوں نے بتایا کہ گھر میں کوئی موجود نہیں ہے ، متاثرہ خاندان کی طرف سے بھی میرے ساتھ کوئی رابطہ نہیں کیاگیا ۔

انہوں نے کہا کہ جب میں تافتان میں تھا تو مجھے فون آیا کہ اعظم سواتی کی جان کوخطرہ ہے اور مسلح لوگ ہیں جنہوں نے ان کے تین لوگوں کوزخمی کردیاہے لیکن مجھے پتہ نہیں تھا کہ اصل مسئلہ کیاہے ؟ مجھے کسی بھی لیول پر آن بورڈ نہیں لیا گیا ، مجھے ساری صورتحال کاپتہ ہوتا تو یہ صورتحال نہ ہوتی ۔

مزید : قومی