ضلعی انتظامیہ بے نامی جائیدادوں کا سراغ لگانے میں ناکام

ضلعی انتظامیہ بے نامی جائیدادوں کا سراغ لگانے میں ناکام

  



لاہور(عامر بٹ سے) وزیر اعظم کی ہدایت نظر انداز،ضلعی انتظامیہ بے نامی جائیدادوں کا سراغ لگانے میں ناکام ہو گئی، این جی آر اور ضلعی انتظامیہ کے اشتراک سے شروع کی جانے والی پریکٹس ضلع لاہور میں بند کر دی گئی۔ ریونیو سٹاف کے عدم تعاون کے باعث بے نامی جائیدادوں کے مالکان محفوظ رہے۔ روزنامہ ”پاکستان“ کو ملنے والی معلومات کے مطابق ایک طرف تو وزیر اعظم  بے نامی جائیدادوں کے مالکان کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لئے بھرپور کوششیں کر رہے ہیں مگر دوسری جانب بیورو کریسی کی عدم توجہی اور لاپرواہی کی پریکٹس وزیر اعظم کی ان کوششوں کو ناکام بنانے میں اہم کردار ادا کر رہی ہے مزیدمعلوم ہوا ہے کہ کئی ماہ گزر جانے کے بعد بھی بے نامی جائیدادوں کے مالکان کا کوئی سراغ نہ لگایا جا سکا۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ریونیو سٹاف کی کثیر تعداد نے بے نامی جائیدادوں کے مالکان کو الٹا تحفظ فراہم کیا ہے اور خود محکمہ ریونیو کے سٹاف کی بے نامی جائیدادوں کی ایک لمبی فہرست کا بھی تعین نہیں کیا جا سکا بے نامی جائیدادوں کے حوالے سے جو فارم دیئے گئے تھے اور جس رولز کے مطابق یہ پالیسی بنای گئی تھی اس پر اتنی خامیاں اور بے نامی جائیدادوں کے مالکان کے لئے آسانی تھی کہ کسی بھی صورت اس کا تعین نہیں لگایا جا سکتا تھا۔اس حوالے سے متعلقہ ذمہ داران کاکہنا ہے کہ بے نامی جائیدادوں کی نشاندہی کیلئے اقدامات جاری ہیں جلد نشاندہی سے بھی آگاہ کیا جائے گا

بے نامی جائیدادیں 

مزید : میٹروپولیٹن 1