آزاد تجارتی معاہدہ سے فائدہ اٹھانا ہو گا: عبد الرزاق داؤد، معاشی استحکام کیلئے بر آمدات بڑھانا ہو نگی: رضا باقر

    آزاد تجارتی معاہدہ سے فائدہ اٹھانا ہو گا: عبد الرزاق داؤد، معاشی استحکام ...

  



اسلام آباد(این این آئی) مشیر تجارت عبد الرزاق داؤد نے کہا ہے کہ افریقہ 54 ممالک پر مشتمل دوسرا بڑا براعظم ہے،جس کی جی ڈی پی آنے والے برسوں میں 29 ٹریلین تک بڑھ جائے گی،ہمیں ہمسائیگی میں موجود اہم مواقعوں سے فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنے تجارتی روابط کو بڑھانا ہو گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزارت خارجہ میں افریقی ممالک کی سفرا کانفرنس کے آخری روز پہلے سیشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔مشیر تجارت نے کہاکہ مجھے خوشی ہے کہ پاکستان میں تیار کردہ ٹریکٹرز بہت سے افریقی ممالک میں ایکسپورٹ کیے جا رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ ہمارا ہدف آئندہ پانچ برسوں میں افریقہ کے ساتھ اپنے تجارتی حجم کو دوگنا کرنا ہے،ہمیں آزادانہ تجارت کے معاہدے سے بھرپور فائدہ اٹھانا ہو گا۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان 30،31 جنوری 2020 میں نیروبی میں متوقع تجارتی کانفرنس میں بھرپور شرکت کریگا۔گورنر سٹیٹ بینک رضا باقر نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی اور مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد کو اس اہم سفرا کانفرنس کے انعقاد پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ہماری معیشت مسلسل بہتری کی طرف جارہی ہے معاشی خسارہ کم ہو رہا ہے۔ گور نر سٹیٹ بینک نے کہاکہ پاکستان، صنعت کاری کے حوالے سے دنیا کی تیسری کم لاگت والی مارکیٹ ہے،ہمیں معاشی استحکام کیلئے اپنی ایکسپورٹ کو بڑھانا ہو گا۔ انہوں نے کہاکہ افریقی مارکیٹ میں ہمارے لئے ایکسپورٹس کے بہترین مواقعے موجود ہیں۔چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ نے کہا افریقی ممالک میں تجارت کے فروغ کیلئے بہت سے مواقع موجود ہیں جن سے مستفید ہونے کیلئے ہمیں مشترکہ عملی اقدام کرنا ہو نگے۔سفراء کانفرنس میں ایکسپورٹس سے وابستہ، ٹیکسٹائل، انجینئرنگ، سپورٹس، فارماسیوٹیکل سیکٹر سمیت پرائیویٹ سیکٹر سے متعلقہ اہم شخصیات نے اپنے اپنے سیکٹر سے متعلقہ ایکسپورٹ کیلئے دستیاب مصنوعات اور درپیش مسائل /چیلنجز سے شرکاء کو آگاہ کیا۔چیئرمین ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے ’ایکسپورٹ کی شرح بڑھانے کیلئے ایکسپورٹ انڈسٹری کو اپنے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔اجلاس میں افریقی ممالک میں تعینات پاکستانی سفراء کے علاوہ کارپوریٹ سیکٹر کے مختلف شعبہ جات سے وابستہ شخصیات نے افریقی ممالک میں تجارت کے حجم کو بڑھانے کیلئے مختلف تجاویز پیش کیں۔ چیف ایگزیکٹو ملت ٹریکٹرز نے وزیر خارجہ اور وزیر تجارت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے افریقی ممالک کو ملت ٹریکٹر کی سالانہ ایکسپورٹ اور افریقی ممالک میں زرعی آلات کی برامدات کے حجم میں اضافے کیلئے مختلف تجاویز دیں۔ماروکو میں تعینات پاکستانی سفیر نے پیشکش کی کہ اگر فارما سیوٹیکل انڈسٹری، سپورٹس انڈسٹری، ٹیکسٹائل انڈسٹری اگر اپنے طور پر بھی موروکو میں اپنی مصنوعات کی نمائش کرنا چاہیں تو سفارت خانہ انہیں نمائش کیلئے جگہ فری آف کاسٹ مہیا کریگا۔سیکرٹری تجارت سردار احمد نواز سکھیرا نے افریقی ممالک کے ساتھ پاکستان کی تجارت کی نوعیت، تجارتی حجم اور تجارتی اعداد و شمار کے حوالے سے شرکاء کو مفصل بریفنگ دی اور سرمایہ کاری کو بڑھانے کیلئے مختلف تجاویز پیش کیں۔

عبدالرزاق داؤد/رضا باقر

مزید : صفحہ اول