ڈریمرز کاآرٹ، موسیقی، اور ادب کے حوالے سے بزمِ کلام کا انعقاد 

ڈریمرز کاآرٹ، موسیقی، اور ادب کے حوالے سے بزمِ کلام کا انعقاد 

  



لاہور (پ ر)ڈریمرز نے اپنی پہلی اور کامیاب تقریب ٹرنک سیل جنوری ۲۰۱۹؁ میں منعقد کی جسے لوگوں نے نا صرف سراہا بلکہ اسے عوام کی طرف سے بے حدپذیرائی بھی ملی۔اس بار بھی ڈریمرز نے کچھ مختلف کرنے کی روایت برقرار رکھتے ہوئے بزمِ کلام کا انعقاد کیا جس کا مقصد فنونِ لطیفہ اور ادب سے تعلق رکھنے والے نوجوانوں کو ایک چھت کے نیچے لانا اور انہیں اپنی قابلیت اور ہنرکو عوام کے سامنے دکھانے کا موقع فراہم کرنا تھا۔ریسرچ اینڈ پبلکیشن سنٹر لاہور میں منعقد ہونے والی یہ تقریب ڈریمرز کی بانی ماحبہ زاہر کیانی اور صبائنہ عظیم کی کاوشوں اور انتھک محنت کا نتیجہ تھی جس میں حصّہ لینے والوں نے اپنی پینٹنگ،شاعری اور موسیقی سے لوگوں کو محظوظ کیا۔لائیو پینٹنگ میں شاندار اور منفرد قسم کے فن پارے پیش کرنے پر عائلہ کیانی، ازکاء مقبول اور ایمان خان کو تقریب میں موجود شرکاء نے بھرپور سراہا۔اس کے علاوہ دانیال نوشاہی اور منیب بٹ نے اپنی خوبصورت دھنوں اور شاندار موسیقی سے اس شام کو مزید یادگار بنایا۔"سنو کہانی میری زبانی" کی طرف سے شرکت کرنے والے عبد الرحمن اور سعدیہ سرمد نے داستان گوئی جیسی قدیم روایت کو نئے اور بہترین انداز میں نبھا کر دیکھنے والوں سے داد وصول کی۔جواد رضاء اور شرکت کرنے والے دیگر افراد بزمِ کلام میں ملنے والی حوصلہ افزائی پر نا صرف خوش ہوئے بلکہ بزمِ کلام کی آئندہ ہونے والی تقریبات کے لئے نیک تمنا ؤں کا اظہا ر بھی کیا۔ڈریمرز نے اس بات کو وقت کی ضرورت سمجھا کے افرا تفری کے اس دور میں ایک ایسی جگہ کا ہونا بہت ضروری ہے جہاں فنونِ لطیفہ اور ادب سے تعلق رکھنے والے لوگ ایک چھت کے نیچے بیٹھ سکیں اپنی سوچ اور فکر کا اظہار کر سکیں، اس لئے ڈریمرز نے بزمِ کلام جیسی شام کا انعقاد کیا۔

اور لوگوں کو اپنے فن، ہنر اور خیالات کے اظہار کے لئے ایک ایسا موقع فراہم کیا جہاں نا صرف ان کے فن کو عزت کے ساتھ تسلیم کیا گیا بلکہ ان کی حوصلہ افزائی بھی کی گئی۔تقریب کا اختتام ڈریمرز کی ٹیم نے اس وعدے کے ساتھ کیا کے مستقبل میں بھی اسی قسم کی منفرد اور نئے طرز کی تقریبا ت کا انعقاد کرتی رہے گی۔

مزید : کامرس