بحریہ یونیورسٹی میں فلسفہ اقبال پر قومی کانفرنس کا انعقاد

    بحریہ یونیورسٹی میں فلسفہ اقبال پر قومی کانفرنس کا انعقاد

  



اسلام آباد(پ ر) بحریہ یونیورسٹی اسلام آباد کیمپس میں فلسفہ اقبال کی اہمیت اور شخصی و معاشرتی تبدیلی میں اس کے کردار پر قومی کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔ اس قومی کانفرنس کا مقصد حکیم الامت کو خراج ِ تحسین پیش کرنا اور نوجوان طلباء میں فلسفہ اقبال کی اہمیت کو اجاگر کرنا تھا۔ چیف آف نیول سٹاف ایڈمرل ظفر محمود عباسی نشان امتیاز(ملٹری) جو یونیورسٹی کے پرو چانسلر اور بورڈ آف گورنرز کے چیئرمین بھی ہیں کانفرنس کے مہمان خصوصی تھے۔ اس دو روزہ قومی کانفرنس میں فلسفہ اقبال کی اہمیت کو اجاگر کرنے کے لیے تقاریر، بحث ومباحثہ اور تحقیقی مقالہ جات پیش کیے گئے۔ بحریہ یونیورسٹی تعلیمی و ادبی سرگرمیوں کے ذریعے قومی ہیروز کی دانشمندانہ فکر کے فروغ کے لیے کوشاں ہے۔کانفرنس میں نامور مقررین پروفیسر فتح محمد ملک، جناب افتخار عارف اور ڈاکٹر شاہد صدیقی شریک ہوئے جنہوں نے فلسفہ اقبال پر تفصیل سے روشنی ڈالی۔ کانفرنس کے مہمان خصوصی نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اقبال کی تعلیمات میں دو چیزیں بہت اہمیت کی حامل ہیں ایک یہ کہ آپ ؒ کی تعلیمات قرآنی تعلیمات سے بہت متاثر ہیں اور دوسرا یہ اپنے اندر جامعیت کا عنصر رکھتی ہیں جو ہر طبقے اور علاقے میں بسنے والے افراد سے مخاطب ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ نوجوان طلباء کو چاہیئے کہ وہ فلسفہ اقبال کو اپنی زندگی میں نافذ کر کے اس سے رہنمائی حاصل کریں۔

اس سے پہلے ریکٹر بحریہ یونیورسٹی وائس ایڈمرل کلیم شوکت ہلال امتیاز(ملٹری) نے اپنے افتتاحی خطاب میں معزز مہمانانِ گرام اور مقررین کا آمد پر شکریہ ادا کیا، انھوں نے شرکاء سے مخاطب ہوتے ہوئے کہاکہ بحریہ یونیوسٹی اقبال کے نظریات کو مدِ نظر رکھتے ہوئے طلباء کی صلاحیتوں کو جدید خطوط پر استوار کر رہی ہے۔انھوں نے مزید کہابحریہ یونیورسٹی میں اقبال چیئر بھی قائم ہے جس کا خصوصی مقصد نوجوان طلباء میں فلسفہ اقبا ل کا فروغ ہے۔معزز مقررین نے کانفرنس میں اقبال کے اشعار بھی پڑھ کر سنائے اور اقبال کے فلسفہ خودی پر خصوصی زور دیا۔ اقبال کے اشعار سے طلباء کافی محظوظ ہوئے اور انھوں اپنی زندگیوں میں فلسفہ اقبال کو نافذ کرنے کا اعادہ کیا۔ کانفرنس میں طلباء، فکیلٹی ممبرز اور مہمان سکالرز کی بڑی تعداد نے شرکت کی جنہوں نے اپنے قومی ہیرو کو خراج ِ تحسین پیش کیا۔

مزید : کامرس