دو روزہ نیونیٹل سیمپوزیم کا انعقاد آج ہو گا

    دو روزہ نیونیٹل سیمپوزیم کا انعقاد آج ہو گا

  



ملتان (وقائع نگار)نشتر میڈیکل یونیورسٹی ملتان میں شعبہ امراض اطفال نشتر کے زیر اہتمام دو روزہ نیونیٹل سیمپوزیم کا انعقاد آج ہو گا،نیونیٹل سیمپوزیم میں چلڈرن ھسپتال لاھور کے ما(بقیہ نمبر56صفحہ12پر)

یہ ناز پروفیسرز ڈاکٹر عرفان وحید اور انکی ٹیم جنوبی پنجاب کے ڈاکٹرز اور نرسز کو ٹریننگ دیں گے،اس حوالے سے سیمپوزیم کے کوآرڈینیٹر ڈاکٹر نصرت بزدار نے بتایا کہ آج پہلے دن Webinar کے زریعے جرمنی کے ڈاکٹر بھی آن لائین لیکچر دیں گے جو نشتر اسمبلی ہال میں دکھایا جائیگا،سیمپوزیم میں جنوبی پنجاب کے تمام سرکاری و نجی ہسپتالوں سے ڈاکٹرز اور نرسز نے رجسٹریشن کرائی ہے جبکہ پروفیسر ڈاکٹر فوزیہ ظفر کی سربراہی میں شعبہ امراض اطفال کی اس کاوش کو سراہا ہے،اس حوالے سے انتظامات کو حتمی شکل دینے کیلئے ڈیپارٹمنٹ آف پیڈیاٹرک میڈیسن میں گزشتہ روز اجلاس ہوا جس سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر ڈاکٹر فوزیہ ظفر نے کہا کہ ان شاء الل? اس طرح کے ٹریننگ پروگرام اور ورکشاپس سے ہم ایک ایسے منظم ہیلتھ کیئر سسٹم کی طرف بڑھیں گے جہاں پر بچوں کا ڈاکٹر یا پیڈیاٹریشن اور گائیناکالوجسٹ اینڈ آبسٹیٹریشن مل کر ماں اور بچے کا ماں کے پیٹ سے لے کر پیدائش اور اس کے بعد تک خیال رکھیں گے مستقبل میں مزید ڈاکٹرز اور نرسوں کو ٹرین کیا جائے گا اور اس پروگرام کا دائرہ کار وسیع کیا جائے گا۔ اس حوالے سے سینئر پیڈیاٹریشن ڈاکٹر ساجد اختر نے بتایا کہ نوزائیدہ بچوں کی شرح اموات میں پاکستان سب سے آگے ہے جس کی ایک بڑی وجہ بچوں کا فوری سانس نہ لینا ہے، امید ہے اس ورکشاپ کے بعد نوزائیدہ بچوں کی شرح اموات اور پیچیدگیوں کو کم کرنے میں مدد ملے گی۔

انعقاد

مزید : ملتان صفحہ آخر