36ویں نیشنل جونیئر ہاکی چیمپئن شپ لاہور میں شروع، 19ٹیمیں مدمقابل 

    36ویں نیشنل جونیئر ہاکی چیمپئن شپ لاہور میں شروع، 19ٹیمیں مدمقابل 

  



لاہور(سپورٹس رپورٹر) پاکستان ہاکی فیڈریشن کے زیر اہتمام 36 ویں نیشنل جونیئر ہاکی چیمپیئن شپ 2019ء لاہور میں شروع ہو گئی۔ گیارہ روز تک جاری رہنے والی چیمپیئن شپ میں انیس ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں۔ نیشنل ہاکی سٹیڈیم میں منعقدہ چیمپیئن شپ کی افتتاحی تقریب کے مہمان خصوصی صوبائی وزیر کھیل رائے تیمور بھٹی تھے، جن سے کھلاڑیوں کا تعارف کرایا گیا۔ اس موقع پر صدر پی ایچ ایف خالد سجاد کھوکھر، سیکرٹری اولمپیئن آصف باجوہ، پنجاب ہاکی ایسوسی ایشن کے سیکرٹری کرنل (ر) آصف ناز، ٹورنامنٹ ڈائریکٹر انجم سعید سمیت اولمپیئن اور انٹرنیشنل کھلاڑیوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔پاکستان ہاک فیڈریشن کے زیر اہتمام جاری 63 ویں نیشنل جونیئر ہاکی چیمپیئن شپ کے پہلے روز سات میچوں کا فیصلہ ہو گیا۔ نیشنل ہاکی سٹیڈیم لاہور میں کھیلی جانے والی چیمپیئن شپ میں ماڑی پٹرولیم، واپڈا، آرمی (اے) اور سندھ کی ٹیموں نے اپنی حریف ٹیموں کو یکطرفہ مقابلے میں شکست سے دو چار کیا جبکہ کے پی کے (اے)، پنجاب (اے)، پورٹ قاسم کی ٹیموں نے بھی اپنے میچز جیت لیے۔ تفصیلات کے مطابق  پہلا میچ کے پی کے (اے) اور آرمی (بی) کی ٹیموں کے درمیان کھیلا گیا جس میں کے پی کے (اے) نے سخت مقابلے بعد ایک صفر سے کامیابی اپنے نام کی۔ دوسرے میچ میں پنجاب (اے) نے اسلام آباد کو پانچ صفر سے ہرایا۔ تیسرے میچ میں ماڑی پٹرولیم (ایم پی سی ایل) نے ناتجربہ ار آزاد جموں کشمیر ٹیم کو سترہ صفر سے مات دی۔ چوتھے میچ میں آرمی (اے) نے پنجاب (بی) کو دس صفر سے ہرایا۔ پانچویں میچ میں واپڈا نے پنجاب (ڈی) کے خلاف ایک کے مقابلے بارہ گول سے کامیابی حاصل کی۔ چھٹا میچ پورٹ قاسم اور بلوچستان کی ٹیموں کے درمیان کھیلا گیا۔ 

پورٹ قاسم نے اس میچ میں چھ دو سے کامیابی اپنے نام کی۔ دن کا آخری میچ سندھ (بی) اور ناتجربہ کار گلگت بلتستان کی ٹیموں کے درمیان کھیلا گیا۔ سندھ ٹیم نے یکطرفہ مقابلے میں پندرہ صفر سے کامیابی اپنے نام کی۔ چیمپیئن شپ میں جمعہ کو مزید آٹھ میچ کھیلے جائیں گے

  اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر کھیل رائے تیمور بھٹی کا کہنا تھا کہ پاکستان کے قومی کھیل کی ترقی کے لیے ان کی خدمات ہر وقت حاضر ہیں۔ صوبائی حکومت اگلے مالی سال میں صوبے مزید ٹرف بچھانے جا رہی ہے۔ پی ایچ ایف انتظامیہ کو مارکباد پیش کرتا ہوں کہ تین سال کے بعد جونیئر چیمپیئن شپ کا انعقاد کرنے جا رہی ہے۔ آنے والے وقت میں یہ چیمپیئن شپ گیم چینجر بھی ہوگی۔ ہاکی کی ترقی کے لیے اپنے سٹار کھلاڑیوں کو سکول اور کالجز کی سطح پر بھجوانے کا پروگرام بنا رہے ہیں تاکہ گراس روٹ لیول سے ہمیں اچھے کھلاڑی مل سکیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ کوئی گیم بھی پیسے کے بغیر نہیں ہوتی، آنے والا وقت پاکستان ہاکی کے روشن مستقبل کی نوید سنائے گا۔ صوبائی وزیر کھیل کا کہنا تھا کہ پنجاب ہاکی ایسوسی ایشن کو جہاں بھی ہماری سپورٹ کی ضرورت ہوتی ہے ہمیشہ ان کے ساتھ ہوتے ہیں۔ وزیر اعظم پاکستان سے ملاقات میں انہیں ہاکی کے مسائل کے بارے میں آگاہ کیا جائے گا۔ نیشنل ہاکی سٹیڈیم کی ٹرف اگلے مالی سال کے ترقیاتی بجٹ میں تبدیل کر دی جائے گی۔ فیصل آباد اور جھنگ میں بھی جلد ٹرف لگ جائیں گی۔ اس موقع پر صدر پی ایچ ایف بریگیڈئر (ر) خالد سجاد کھوکھر کا کہنا تھا کہ ماضی میں مالی مسائل کی وجہ سے مشکلات کا سامنا رہا ہے اب ایسا نہیں ہوگا۔ جلد غیر ملکی ٹیموں کی پاکستان آمد کے ساتھ ساتھ ہماری ٹیمیں بھی انٹرنیشنل میچز میں شریک ہوتی دکھائی دینگی۔ ملک میں بین الاقوامی ہاکی کی واپسی کے لئے اقدامات کررہے ہیں۔ اس حوالے سے ہماری بین الاقوامی سطح پر مختلف ممالک سے بات چل رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ڈومیسٹک ہاکی کو مضبوط اور فعال بنانے کے لئے اقدامات کررہے ہیں۔ پرو لیگ میں حصہ نہ لینے کا بہت نقصان ہواہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی