امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اچانک افغانستان پہنچ گئے، بڑا اعلان کردیا

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اچانک افغانستان پہنچ گئے، بڑا اعلان کردیا
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اچانک افغانستان پہنچ گئے، بڑا اعلان کردیا

  



کابل(مانیٹرنگ ڈیسک) مسیحی برادری کرسمس سے قبل تھینکس گیونگ (Thanks Giving)ڈے مناتی ہے۔ امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ یہ دن اپنے فوجیوں کے ساتھ منانے اچانک دورے پر افغانستان پہنچ گئے۔

صدر ٹرمپ نے بگرام ایئربیس پر امریکی فوجیوں کے ساتھ کھانا کھایا اور ان کے ساتھ خطاب کرتے ہوئے افغان طالبان کے ساتھ دوبارہ مذاکرات شروع کرنے کا بھی اعلان کر دیا۔ انہوں نے فوجیوں سے کہا کہ ”افغانستان میں لڑنے والے امریکی فوجی روئے زمین پر سب سے زیادہ بہادر ہیں چنانچہ ان کے ساتھ وقت گزارنے کے علاوہ تھینکس گیونگ ڈے کہیں اور منانے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔“

صدر ٹرمپ نے افغانستان کی صورتحال پر کہا کہ ”ہم جنگ بندی چاہتے ہیں اور افغان طالبان بھی جنگ بندی پر راضی ہیں اور معاہدہ چاہتے ہیں۔ اگر وہ معاہدہ کرنا چاہتے ہیں تو ہم اسے دیکھیں گے اور اگر ایسا ہو جاتا ہے تو یہ ایک اچھا معاہدہ ہو گا۔ میں دنیا میں کسی بھی دوسرے شخص سے زیادہ امن کا متمنی ہوں۔ یہاں ہمیں ایسی شاندار فتح مل رہی ہے جیسی امریکہ کو طویل عرصے سے کہیں نہیں ملی۔“

صدر ٹرمپ نے اس تقریر میں افغانستان سے امریکی فوجیوں کے انخلاءکا بھی اعلان کیا اور کہا کہ ’ہم آپ لوگ اس وقت تک ان تھک کام کرتے رہیں گے جب تک آپ میں سے ہر ایک محفوظ طریقے سے گھر واپس اپنے خاندان کے پاس نہیں پہنچ جاتا۔“صدر ٹرمپ نے اس دوران افغان صدر اشرف غنی سے بھی ملاقات کی جس میں افغانستان کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

مزید : بین الاقوامی