”ایڈیلیڈ میں ٹھنڈ ہے اور ہمارے لئے میچ بھی ٹھنڈا ہوتا جا رہا ہے“

”ایڈیلیڈ میں ٹھنڈ ہے اور ہمارے لئے میچ بھی ٹھنڈا ہوتا جا رہا ہے“
”ایڈیلیڈ میں ٹھنڈ ہے اور ہمارے لئے میچ بھی ٹھنڈا ہوتا جا رہا ہے“

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کے سابق ٹیسٹ کرکٹر باسط علی نے کہا ہے کہ ایڈیلیڈ میں ٹھنڈ ہے اور ہمارے لئے میچ بھی ٹھنڈا ہوتا جا رہا ہے، اب ساری ذمہ داری بلے بازوں بالخصوص امام الحق اور شان مسعود پر ہے کہ وہ ٹیم کو اچھا آغاز فراہم کریں، پاکستان نے یہ میچ ڈرا کر دیا تو یہ جیت ہو گی۔

تفصیلات کے مطابق ایڈیلیڈ ٹیسٹ میچ کے افتتاحی روز کے کھیل پر تبصرہ کرتے ہوئے باسط علی نے کہا کہ ایڈیلیڈ میں بہت زیادہ سردی ہے کیونکہ جس طرح کھلاڑیوں نے سویٹرز پہنے ہوئے ہیں اس سے یہی ظاہر ہو رہا ہے اور مجھے لگتا ہے کہ ہمارے لئے میچ بھی ٹھنڈا ہوتا جا رہا ہے، آسٹریلیا کے دونوں بلے باز کیا ہی خوب کھیلے جنہوں نے سنچریاں بھی بنا لی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی باﺅلرز نے ابتدائی 10 اوورز تک جاری ماری جس کے بعد محمد موسیٰ باﺅلنگ کرنے آیا تو اس نے جہاں بال آگے کرنی تھی وہاں پیچھے کی، یہاں اظہر علی کو کردار ادا کرنا چاہئے تھا کیونکہ وہ سینئر بھی ہیں اور کپتان بھی، شاہین آفریدی اور اسد شفیق محمد موسیٰ کو مشورے دے رہے تھے لیکن یہاں اظہر علی اور بابراعظم کو آگے آ کر بتانا چاہئے تھا کہ کس لائن اور لینتھ پر باﺅلنگ کرنی ہے۔

باسط علی نے کہا کہ اظہر علی کی کپتانی بہت دفاعی ہے اور جارح مزاجی بالکل بھی نظر نہیں آئی حالانکہ موجودہ حالات میں پاکستان کو جارحانہ سوچ کی بہت ضرورت ہے۔ یاسر شاہ سے جس جارحانہ کھیل کی امید تھی، وہ بھی پوری نہیں ہوئی، اب امام اور شان مسعود پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ اچھی بیٹنگ کریں کیونکہ پاکستان اگر یہ میچ ڈرا کر دیتا ہے تو یہ پاکستان کی جیت ہو گی۔

مزید : کھیل