ملتان میں جلسہ گاہ جانے کی کوشش میں گرفتار علی قاسم گیلانی کو ایک ماہ کے لیے جیل بھجوانے کے احکامات جاری کردیئے گئے

ملتان میں جلسہ گاہ جانے کی کوشش میں گرفتار علی قاسم گیلانی کو ایک ماہ کے لیے ...
ملتان میں جلسہ گاہ جانے کی کوشش میں گرفتار علی قاسم گیلانی کو ایک ماہ کے لیے جیل بھجوانے کے احکامات جاری کردیئے گئے

  

ملتان(ویب ڈیسکٰ) جلسہ گاہ جانے کی کوشش کے دوران گرفتار ہونیوالے  سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کے صاحبزادے علی قاسم گیلانی کو ایک ماہ کے لیے جیل بھجوانے کے احکامات جاری کر دیے گئے۔

محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے جاری مراسلے میں کہا گیا ہے کہ علی قاسم گیلانی نے کورونا کی خلاف ورزی کی اور عوام کی زندگیوں کو خطرے میں ڈالا، علی قاسم گیلانی قاسم  سٹیڈیم میں جلسہ کرنا چاہتے ہیں، جس کی اجازت نہیں ہے۔حکومتی مراسلے میں کہا گیا ہے کہ جلسہ کرنا کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی ہے، علی قاسم گیلانی لوگوں کو جلسے کے لیے اکسا رہے ہیں۔

خیال رہے کہ 30 نومبر کو پی ڈی ایم نے ملتان کے قاسم باغ میں جلسے کا اعلان کر رکھا ہے لیکن حکومت کی جانب سے جلسے جلوس نکالنے پر پابندی عائد ہے۔گزشتہ روز پورا دن ملتان کا قاسم باغ سٹیڈیم میدان جنگ بنا رہا اور پولیس اور پی ڈی ایم کارکنوں کے درمیان لڑائی جھگڑے کے واقعات بھی رونما ہوئے۔پولیس نے کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر پیپلز پارٹی کے رہنما علی قاسم گیلانی سمیت 30 افراد کو گرفتار کیا جب کہ پیپلز پارٹی کے 370 سے زائد افراد کے خلاف تھانہ لوہاری گیٹ میں مقدمہ درج کیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ علی قاسم گیلانی سمیت دیگر کارکنا پر مقدمہ قاسم باغ  سٹیڈیم کے دروازے توڑنے اور کنٹیرز ہٹانے پر درج کیا گیا ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -ملتان -