ساہیوال میں 8 سالہ بچی کا زیادتی کے بعد قتل ، پولیس نے ملزمان پکڑ لیے

ساہیوال میں 8 سالہ بچی کا زیادتی کے بعد قتل ، پولیس نے ملزمان پکڑ لیے
ساہیوال میں 8 سالہ بچی کا زیادتی کے بعد قتل ، پولیس نے ملزمان پکڑ لیے

  

ساہیوال (ڈیلی پاکستان آن لائن )ساہیوال میں کمسن طالبہ کو زیادتی کے بعد قتل کرنے کا معمہ پولیس نے حل کر لیاہے ، باپ ، چچا ، پھوپھی اور پھوپھا کو اس گھناﺅنے عمل ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار کر لیاہے ۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز آٹھ سالہ بچی رخسانہ کے والد نے پولیس کو مقدمہ درج کروایا تھا کہ ان کی بیٹی دکان سے سامان لینے گئی تھی اور کافی دیر تک واپس نہیں آئی ، گھر والوں نے تلاش کرنا شروع کیا تو کافی دیر بعد ایک محلے دار نے بتایا کہ موٹر سائیکل پر سوار ملزمان اس کی بیٹی کو گھر کے سامنے پھینک گئے ہیں ۔بچی کے والد نے موقف اختیار کیا کہ بدلہ لینے کیلئے بیٹی کو قتل کیا گیاہے تاہم اب اس کہانی کا ڈراپ سین ہو گیاہے ۔

پولیس نے تحقیقات کے دوران گھر سے ہی بچی کے جوتے اور آلہ قتل برآمد کر لیا اورہڑپہ پولیس نے بچی کے والد اور پھوپھی کو حراست میں لے لیاہے ، پولیس کا دعویٰ ہے کہ ملزمان نے مخالفین کو پھنسانے کیلئے بچی کو رات کو ہی قتل کر دیا تھا اور مخالفین کے خلاف مقدمہ درج کروایا ۔ پوسٹ مارٹم میں بچی کے ساتھ زیادتی کے بھی شواہد ملے ہیں ۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -ساہیوال -