ایبٹ آباد، زیر حراست ملزمان پر مخالفین کی فائرنگ، 1جاں بحق، 5زخمی، پولیس موقع سے فرار

  ایبٹ آباد، زیر حراست ملزمان پر مخالفین کی فائرنگ، 1جاں بحق، 5زخمی، پولیس ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


        ایبٹ آباد (بیورو رپورٹ) ایبٹ آباد پولیس کی زیر حراست  ملزمان پر مخالف گروپ کی اندھا دھند فائرنگ پولیس موقع سے فرار ایک جان بحق 5 زخمی مقتول ومضروب کے لواحقین نے واقعہ کو مقامی پولیس کی ملی بھگت قرار دیدیا  واقعات کے مطابق  تھانہ ڈونگا گلی کی چوکی چھانگلہ گلی کی حدود تاجوال کے رہائشی خاندان میں رشتہ کے تنازعہ پر چھانگلہ گلی پولیس چوکی کے اہلکار چھ ملزمان کو 107 کی ضمانت کے لیئے ایبٹ آباد عدالت میں پیش کرنے کے لیئے لا رہے تھے کہ تھانہ بگنوتر کی حدود عزیز آباد پہنچنے پر مخالف پارٹی نے ان پر فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں ایک شخص قتل  جبکہ پانچ افراد شدید زخمی ہوئے جبکہ چھانگلہ گلی کے پولیس اہلکار فائرنگ کے دوران ملزمان کو چھوڑ کر فرار ہوگئے تھے مقامی لوگوں اور ریسکیو1122 کے اہلکاروں نے زخمیوں اور نعش کو ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال منتقل کیا جہاں پر دیگر زخمیوں کی حالت تشویش ناک ہونے پر ڈاکٹروں نے ایوب ٹیچنگ ہسپتال ریفر کیا گیا قتل  ہونے والے شخص دلپزیر اور زخمیوں کی شناخت محمد منیر، محمد الطاف محمد نصیر سے ہوئی  مقامی پولیس اسٹیشن سے رابطہ کرتے ہیں زرائع کے مطابق چوکی چھا نگلہ  گلی انچارج کے خلاف پہلے بھی کئی شکایات اعلی حکام تک پہنچی مگر اعلی حکام عرصہ دراز سے تعنیات پولیس اہلکار تبدیل نہ کرسکے اس حوالے سے زخمیوں نے میڈیا کو بتایا ہے کہ قانون کے مطابق 107 دونوں طرف سے ہوتی ہیں لیکن چوکی انچارج دوسری پارٹی سے پیسے کھا کر ہمیں یکطرفہ پابند کیا ہے زرائع کے مطابق رات گئے تک ڈی پی او ایبٹ آباد کی طرف سے تاحال کوئی پولیس اہلکار و چوکی انچارج معطل نہ ہوسکا جس پر مقامی لوگ ایبٹ آباد پولیس کے خلاف سراپا احتجاج ہیں جس پر مقامی لوگوں نے ڈی آئی جی ہزارہ سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے