عافیہ صدیقی رہائی کیس؛ اسلام آباد ہائیکورٹ کادفتر خارجہ کی پیش کردہ خط و کتابت پر عدم اطمینان کااظہار

عافیہ صدیقی رہائی کیس؛ اسلام آباد ہائیکورٹ کادفتر خارجہ کی پیش کردہ خط و ...
عافیہ صدیقی رہائی کیس؛ اسلام آباد ہائیکورٹ کادفتر خارجہ کی پیش کردہ خط و کتابت پر عدم اطمینان کااظہار

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی سے متعلق کیس میں دفتر خارجہ کی پیش کردہ خط و کتابت پر عدم اطمینان کااظہار کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر مکمل ریکارڈ طلب کر لیا۔

نجی ٹی وی چینل "ایکسپریس نیوز" کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ میں امریکی جیل میں قید پاکستانی ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، جسٹس سردار اعجاز اسحاق خان نے کیس کی سماعت کی۔درخواست گزار کی جانب سے حافظ یاسر عرفات اور وزارت خارجہ کے حکام عدالت میں پیش ہوئے، عدالتی حکم پر امریکہ کے ساتھ کی گئی خط و کتابت کا ریکارڈ اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیش کیاگیا۔

عدالت نے دفتر خارجہ کے حکام سے مکالمہ کرتے ہوئے کہاکہ آپ نے دوبارہ وہی پراسس شروع کر دیا جو پہلے کر چکے ہیں۔درخواست گزار کے وکیل حافظ یاسر عرفات نے کہاکہ دفتر خارجہ نے جو رپورٹ جمع کرائی ہے اس کی کاپی فراہم کی جائے تاکہ میں اس کو دیکھ لوں۔ جسٹس سردار اعجاز اسحاق خان نے کہاکہ امریکہ کے ساتھ جو خط و کتابت ہوئی ہے وہ دکھائیں، ایک ماہ کے بعد دوسری رپورٹ آئی ہے جو غیر تسلی بخش ہے۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے دفتر خارجہ کی پیش کردہ خط و کتابت پر عدم اطمینان کا اظہارکرتے ہوئے آئندہ سماعت پر تمام خط و کتابت کا ریکارڈ پیش کرنے کا حکم دیدیا، عدالت نے کیس کی سماعت 7 دسمبر تک ملتوی کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -