منبر اور محراب کے وارثوں نے اپنا فریضہ صحیح ادا نہیں کیا ،مولانا محمد طیب

منبر اور محراب کے وارثوں نے اپنا فریضہ صحیح ادا نہیں کیا ،مولانا محمد طیب

صوابی(بیورورپورٹ)امیر جماعت اشاعت التوحید والسنت پاکستان کے مرکزی امیر مولانا محمد طیب نے کہا ہے کہ اس وقت ہمارا معاشرہ انتہائی خراب صورتحال سے دوچار ہے ان خیالات کااظہار انہوں نے نماز جمعہ کے بعد دارالقر آن پنج پیر میں سہ روزہ اجتماع عام کی افتتاحی عظیم الشان اجتماع سے خطاب کر تے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ باوجود اس کے کہ اس معاشرے میں خیر و نیکی کا جذبہ تمام دُنیا سے زیادہ ہے لوگ ایک دوسرے کا دکھ درد بھی بانٹتے ہیں اور نیکیاں بھی بانٹتے ہیں مگر پھر بھی معاشرہ امن کو ترس رہا ہے اور اس کی وجہ یہ ہے کہ ہم نے ساری اُمیدیں سیاست اور اہل سیاست سے وابستہ کر دی ہے۔ ہم اپنے مسائل کے حل اور دکھوں کے مداوا کے لئے ان کی طرف دیکھتے ہیں حالانکہ کئی بار سیاست بھی بدلی ہے اور سیاستدان بھی بدلے ہیں لیکن لوگوں کی حالت نہیں بدلی اس کی وجہ یہ ہے کہ منبر اور محراب کے وارثوں نے اپنا فریضہ صحیح طور پر ادا نہیں کیا اور اکثر منبر اور محراب کو ذاتی اور دُنیاوی مفادات کے لئے استعمال کیا انہوں نے کہا کہ اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے جماعت اشاعت التوحید السنت کو یہ اعزا ز حاصل ہے کہ منبر اور محراب کو اصلاح معاشرہ اور لوگوں کی دین و دُنیا کی بہتری کے لئے استعمال کیا جس عہدے کو شیخ القر آن حضرت مولانا محمد طاہر ( مرحوم) نے کاشت کیا آج وہ تناور درخت بن چکا ہے موجودہ حالات میں ہماری جماعت پر زیادہ ذمہ داری عائد ہو تی ہے کہ وہ قر آن و سنت کے تعلیمات کی روشنی میں اصلاح معاشرہ کا کام کریں ہمیں فکری کام کے ذریعے ذہن سازی پر توجہ دینی چاہئے تاکہ ہم قوم کو ایک کر دار سے آراستہ افراد اور پاک دامن سیاستدان دے سکے اجتماع سے مفتی سراج الدین اور دیگر علماء کرام نے بھی خطاب کیا جب کہ اس موقع پر مولانا محمد طیب کے بڑے بھائی میجر(ر) محمد عامر کی صحت یابی کے لئے اجتماعی دُعا بھی مانگی گئی جماعت کا یہ سالانہ اجتماع اتوار تک جاری رہے گا پنج پیر کے مضافات میں خیموں کا ایک پورا شہر آباد ہو چکا ہے جس میں لوگوں کی کثیر تعداد شریک ہیں ہر طرف ایک مذہبی تہوار اور جشن کا سماں ہے اس اجتماع کے مختلف سیشن ہونگے جس میں ملک کے نامور علماء دین خصوصی خطابات کرینگے

مزید : پشاورصفحہ آخر