اچھے برے طالبان سب کیخلاف کارروائی ناگزیر ہوچکی ،ایمل ولی خان

اچھے برے طالبان سب کیخلاف کارروائی ناگزیر ہوچکی ،ایمل ولی خان

شبقدر( نمائندہ خصوصی )دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پختون قوم کی قربانیاں لازوال ہیں اچھے اور برے طالبان سب کے خلاف کاروائیاں ہونی چاہیں نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد کی ضرورت ہے قیام امن کے لیے پاکستان افغانستان اور امریکہ تینوں کا کردار بہت اہم ہیں عوامی نیشنل پارٹی کے قائدین اور تمام کارکنان اور عہدیداران محب وطن پاکستانی ہیں ہمیشہ قوم کی بقاء کی جنگ لڑی ہیں پختون قوم کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے نہیں دینگے ہر قسم کی قربانی دینے کے لیے ہر وقت تیار ہیں سانحہ کوئٹہ کے شہید کیپٹن روح اللہ سمیت تمام جوانوں کی قربانیوں پر فخر ہیںیہ باتیں عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری ایمل ولی خان نے شبقدر میں شہید کیپٹن روح اللہ کے خاندان سے تعزیت کے بعد علاقہ میاں عیسیٰ میں ورکرز کنونشن اور شمولیتی پروگرام میں ایک بڑے جلسے سے خطاب کے دوران کہیں جسمیں قومی وطن پارٹی اور پاکستان تحریک انصاف کے درجنوں افراد نے استعفے دئیے اور عوامی نیشنل پارٹی میں باقاعدہ شمولیت کا اعلان کیا اس موقع پر ضلعی صدر اور سابقہ صوبائی وزیر قانون ارشد عبداللہ جنرل سیکرٹری محمد خان دیگر عہدیدار تیمور خٹک عنایت الرحمان حسن خان تیمور خان آف میاں عیسیٰ اور دیگر بھی موجود تھے کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے ایمل ولی خان نے کہا 1947میں خان عبدالغفار خان باچہ خان نے پاکستان کو تسلیم کیا تھا اس کے بعد خان عبدالولی خان اور میرے والد اور عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنماء اسفندیار ولی خان ہم سب نے پاکستان دل سے تسلیم کیا ہے اور تسلیم کرتے ہیں لیکن ہمارے سیاسی بیان کا اکثر غلط مطلب لیا جا رہا ہیں انہوں نے کہا کہ ہمارا گھرانہ عالمی سیاست کر رہا ہیں اور ہمیشہ پاکستان کے لیے ہم نے بڑی قربانیاں دی ہیں لیکن سیاسی نابالغ ہمارے اوپر مختلف قسم کے الزامات لگا کر اپنی ساکھ کو نقصان پہنچا رہے ہیں انہوں نے کہا عمران خان نے پختون قوم کے ساتھ دھوکہ کیا تبدیلی کے نام پر ووٹ لے لیا اب پختون قوم کے مینڈیٹ کا مذاق اڑا رہے ہیں ناچ گانے اور مسلسل دھرنوں سے تبدیلی نہیں آتی ایک سوچھے سمجھے منصوبے کے تحت پختون قوم کو پسماندگی کی طرف دھکیل دیا جا رہا ہیں انہوں نے کہا کہ سانحہ کوئٹہ کی تحقیقات شفاف ہونی چاہیں انہوں نے کہا کہ پاکستان کے اندر تمام اچھے اور برے طالبان کے خلاف کاروائی ہونی چاہیں جب تک افغانستان میں امن نہیں آتا پاکستان میں بھی امن قائم نہیں ہوسکتا انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف پختون قوم کے جوانوں کی شہادت پر فخر کرتا ہو اور میں اللہ سے دعا کرتا ہو کہ اپنے وطن کی مٹی پر شہید ہو جاؤ

مزید : پشاورصفحہ آخر