عدالتی حکم عدولی‘ سابق پرنسپل نشتر میڈیکل کالج و ہسپتال ڈاکٹر شبیر ناصر سمیت 7 افراد کو گرفتار کر کے 14 نومبر کو پیش کرنے کا حکم

عدالتی حکم عدولی‘ سابق پرنسپل نشتر میڈیکل کالج و ہسپتال ڈاکٹر شبیر ناصر ...

ملتان (نمائندہ خصوصی)جوڈیشل مجسٹریٹ ملتان نے عدالتی احکامات کے باوجود پیش نہ ہونے پرایس ایچ اوتھانہ سیتل ماڑی کو سابق پرنسپل نشتر ہسپتال ومیڈیکل کالج ملتان ڈاکٹر شبیر(بقیہ نمبر46صفحہ12پر )

ناصر سمیت7 افرادکو گرفتارکرکے14 نومبر کوپیش کرنیکا حکم دیا ہے۔فاضل عدالت میں نواں شہر چوک ملتان کے محمدعظیم نے استغاثہ دائر کیا تھاکہ اس نے مذکورہ سابق پرنسپل کے پرائیویٹ کالج میں اپنی بیٹی عائشہ عظیم کو لاکھوں روپے دے کر داخل کرایا جس کو کالج سے خارج کرنے پر فیس واپس کرنے کا تقاضا کیا تو ڈاکٹر شبیر ناصر نے اپنے ساتھیوں ڈاکٹر زاہد حبیب قریشی ،ڈاکٹر اطہر سعید،عمران رسول ،محمد صفد راور3 سیکورٹی گارڈز کے ہمراہ محبوس کرکے تشدد کانشانہ بنایا جس پران افرا دکے خلاف کارروائی کرکے سزادی جائے جس میں فاضل عدالت نے مذکورہ افرادکو پیش ہونے کے لئے کئی باراحکامات جاری کئے لیکن پیش نہ ہونے پر وارنٹ گرفتاری جاری کرکے پیش کرنیکاحکم دیاگیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر