’آپ کے ملک میں یہ کام کردیتے ہیں پھر آپ کو کسی سے ہتھیار مانگنے کی ضرورت ہی نہیں رہے گی‘ پاکستان نے قطر کو بڑی پیشکش کردی

’آپ کے ملک میں یہ کام کردیتے ہیں پھر آپ کو کسی سے ہتھیار مانگنے کی ضرورت ہی ...
’آپ کے ملک میں یہ کام کردیتے ہیں پھر آپ کو کسی سے ہتھیار مانگنے کی ضرورت ہی نہیں رہے گی‘ پاکستان نے قطر کو بڑی پیشکش کردی

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) جدید ترین اسلحے کی تیاری میں خود کفالت کی جانب سفر میں پاکستان نے جے یف 17 تھنڈر جنگی جہاز بنا کر ایک اہم سنگ میل عبور کر لیا، جس کے بعد دنیا بھر کے ممالک پاکستانی اسلحے کی خریداری میں دلچسپی کا اظہار کر رہے ہیں۔ براد ر اسلامی ملک قطر کی جانب سے بھی اسلحہ سازی کے میدان میں پاکستانی مہارت سے استفادے کی خواہش کا اظہار کیا گیا تھا، جس کے جواب میں پاکستان کی جانب سے قطر کو اسلحہ سازی کے شعبے میں مکمل تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہوئے ٹرانسفر آف ٹیکنالوجی کی بنیادوں پرملٹری ہارڈویئر پروڈکشن کے شعبے میں ہر ممکن ٹیکنیکل مدد کی پیشکش کردی گئی ہے۔

’یہ کام کرکے ہم نے ایٹمی جنگ کی تیاری مکمل کرلی‘

اخبار ایکسپریس ٹریبیون کی رپورٹ کے مطابق یہ پیشرفت جمعرات کے روز قطر کے وزیر دفاعی امور ڈاکٹر خالد بن محمد العطیہ کی وزیراعظم محمد نواز شریف، آرمی چیف جنرل راحیل شریف اور وزیر دفاع خواجہ محمد آصف کے ساتھ علیحدہ علیحدہ ملاقاتوں کے بعد ہوئی۔ قطری وزیر سے بات کرتے ہوئے وزیراعظم محمد نواز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان کے لئے قطر کے ساتھ باہمی تعلق کی بہت اہمیت ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ قطر پاکستان کو اپنا قریبی ترین اتحادی اور برادر ملک شمار کرسکتا ہے۔ وزیراعظم محمد نواز شریف قطر، ترکی اور پاکستان کے مشترکہ دفاعی مینوفیکچرنگ منصوبوں کی بات پہلے بھی کرچکے ہیں۔

قطری وزیر برائے دفاعی امور کا بھی اس موقع پر کہنا تھا کہ قطر پاکستان کو سٹریٹجک پارٹنر کے طور پر دیکھتا ہے اور دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کو مزید مضبوط کرنے کے لئے ہر ممکن کوشش کی جائے گی۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ پاکستان کی مدد کے ساتھ قطر اپنے ملٹری ہارڈویئر کو بہتر بنانا چاہتا ہے تاکہ دہشتگردی کے خطرے سے بہتر طور پر نمٹ سکے۔ ان کا کہناتھا کہ قطر پاکستان سے سپر مشاق اور JF-17 تھنڈر طیارے خریدنا چاہتا ہے جبکہ اس کے تعاون سے اسلحہ سازی کی صنعت کا فروغ بھی چاہتا ہے۔

مزید : بین الاقوامی